کرونا وائرس

’جن کے دوست نہیں وہ کرونا سے محفوظ ہیں‘ ایک ڈاکٹر کے بیان پر طوفانی ردعمل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کرونا ابھی بھی ہماری زندگیوں اور دلچسپیوں کا ایک بڑا حصہ لے رہا ہے جس کا اندازہ ایک کورین ڈاکٹر کے متنازع بیان سے کیا جا سکتا ہے۔ ڈاکٹر نے ایک ایسے تبصرے کی وجہ سے ہنگامہ اور تنازع کھڑا کر دیا جو کوئی عجیب بات نہیں۔

جنوبی کوریا کی ویکسین ایسوسی ایشن کے نائب صدرما سانگ ہائوک نے دعویٰ کیا کہ جو لوگ اب تک ابھرتے ہوئے وائرس سے متاثر نہیں ہوئے ہیں ان کے دوست نہیں ہوں گےاور وہ ذاتی مسائل کا شکار ہو سکتے ہیں!

ہاؤک نے گذشتہ ہفتے فیس بک پر اپنی رائے لکھی۔ تاہم کورین اخبارات کے حوالے سے "اسکائی" نیٹ ورک کے مطابق جب ڈاکٹر کو تنقید کا نشانہ بنایا جانے لگا توانہوں نے پوسٹ ہٹا دی تھی۔

جواز

کچھ دن بعد، ڈاکٹر نے اپنے فیس بک تبصروں کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ انہیں غلط فہمی ہوئی ہے۔

انہوں نے پریس بیانات میں مزید کہا کہ وہ اس بات پر زور دے رہے ہیں کہ کسی کے لیے بھی اس وائرس سے بچنا کتنا مشکل ہے۔ ایسی صورتحال کی روشنی میں جس میں خطے میں تصدیق شدہ کیسز کی ایک بڑی تعداد غالب ہے۔

یہ اس وقت سامنے آیا جب جنوبی کوریا میں 16 مارچ کو کرونا کے کیسز کی تعداد چالیس لاکھ سے تجاوز کرگئی اور اس روز 741 نئے کیسز ریکارڈ کیے گئے۔

جنوبی کوریا آنے والے ہفتوں میں سماجی دوری کی تقریباً تمام پابندیوں کو ہٹانے کے لیے تیار ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں