روس اور یوکرین

پینٹاگون کا یوکرین میں روسی نقل و حرکت کو پسپائی قرار دینے سے گریز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی وزارت دفاع پینٹاگون نے یوکرین میں فوجی آپریشن کو کم کرنے کے روسی دعوے پر رد عمل دیتے ہوئے کہا کہ کیف کے گرد روسی نقل و حرکت پسپائی نہیں کہلائی جاسکتی۔

پینٹاگون کے پریس سیکریٹری جان کربی نے پریس کانفرنس میں بتایا کہ "ہمارا یقین ہے کہ یہ نقل و حرکت پسپائی نہیں بلکہ محض فوج کی جگہ بدلنے کی کوشش ہے۔"

کربی کے مطابق "ہم ابھی دیکھ رہے ہیں کہ روسی فوج کی جانب سے واپسی کے اعلان کے بعد ایک قلیل تعداد کیف سے دور جا رہی ہے۔"

روس نے پینٹاگون کے بیان سے کچھ گھنٹے قبل اعلان کیا تھا کہ امن مذاکرات کی بحالی سے قبل یوکرینی دارالحکومت کیف کے گرد فوجی آپریشنز میں کمی لائی جائے گی

کربی نے بتایا کہ روس کیف پر قبضے کے مقصد کو حاصل کرنے میں ناکام ہوگیا ہے مگر ساتھ ہی خبردار کیا کہ جنگ ابھی ختم نہیں ہوئی۔

امریکی عہدیدارکے مطابق "ہمارے خیال میں روسی فوج کسی اور محاذ پر لڑائی کے لئے فوج کی نقل و حرکت کر رہی ہے اور یوکرین کے دیگر علاقوں پر روسی جارحیت بڑھ سکتی ہے۔"

علاوہ ازیں پینٹاگون نے اعلان کیا کہ امریکی فوج 10 ایف -18 طیارے اور 200 سے زائد فوجی لیتھوانیا میں تعینات کر رہا ہے۔ اس سے قبل گزشتہ روز امریکا نے چھ گرائولر جنگی طیارے جرمنی بھیجنے کا اعلان کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں