سعودی عرب: موسمی تفریحی شہروں کے لیے مقامی لیبر بھرتی کرنے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جمعرات کو سعودی عرب میں انسانی وسائل اور سماجی ترقی کے وزیر احمد بن سلیمان الراجحی نے ایک فیصلہ جاری کیا کہ آزاد اور موسمی تفریحی شہروں اور خاندانی تفریحی مراکز کو 70 فیصد تک مقامی بنایا جائےاور تفریحی شہروں کو بند کمرشل کمپلیکس کے اندر مقامی بنانے کا 100 فی صد فیصلہ 09/23/2022 کو نافذ ہوگا۔

سعودی خبر رساں ایجنسی ’ایس پی اے‘ کےمطابق اس فیصلےکا مقصد انسانی وسائل اور سماجی ترقی کی وزارت کی جانب سے مملکت کے مختلف خطوں میں مرد اور خواتین شہریوں کے لیے حوصلہ افزا اور پیداواری ملازمتوں کے مواقع فراہم کرنا، لیبر مارکیٹ میں ان کی شرکت کی سطح کو بڑھانا اور اقتصادی نظام میں ان کے تعاون کو فروغ دینا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ فیصلے میں جن سب سے نمایاں پیشوں کو نشانہ بنایا گیا ہے ان میں برانچ مینیجر، ڈیپارٹمنٹ مینیجر، ڈیپارٹمنٹ سپروائزر، اسسٹنٹ برانچ مینیجر، اکاؤنٹنگ فنڈ سپروائزر، کسٹمر سروس، سیلز اسپیشلسٹ اور مارکیٹنگ ماہر شامل ہیں۔

اس فیصلے میں متعدد پیشوں کو خارج کر دیا گیا خاص طور پر کلینر، لوڈنگ اور ان لوڈنگ ورکرز، معیاری گیمز کے آپریٹرز جن کے لیے قابلیت اور خصوصی سرٹیفکیٹ کے ساتھ آپریٹرز کی ضرورت ہوتی ہے۔

وزارت انسانی وسائل نے فیصلے کے ساتھ آجروں اور اداروں کو مطلع کرنے اور دوبارہ آبادکاری کا حساب لگانے کے طریقہ کار اور خلاف ورزی کرنے والوں کے لیے مقرر کردہ جرمانے کے بارے میں جاننے کے لیے ایک گائیڈ پیپربھی جاری کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں