تیزاب سے جلائی گئی خاتون سپرد خاک، جنازے میں شہریوں کی کثیر تعداد شریک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے شہر جدہ میں سفاک شوہر کے ہاتھوں تیزاب پھینک کر قتل کی گئی خاتون کو کل اتوار کے روزمکہ مکرمہ میں شہدائے حرم قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا۔ خاتون کے جنازے میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔

سعودی عرب کے شہر جدہ کی ایک مشرقی کالونی میں چند روز قبل ایک مقامی شخص نے اپنی بیوی اور اس کی بچی پر تیزاب پھینک کر انہیں جلا دیا تھا۔ تیزاب حملے میں اس کی بیوی چل بسی تھی جب کہ بچی کو تشویشناک حالت میں اسپتال لے جایا گیا ہے۔

اس المناک واقعے پر پورے ملک میں شدید صدمے اور غم وغصے کی لہر دوڑ گئی تھی۔

مقتولہ کی موت اس کے شوہر کے ہاتھوں اس وقت ہوئی جب جدہ کے مشرق میں ایک محلے میں اس کے جسم پر تیزاب ڈالا گیا اور اس کی بیٹی بری طرح جھلس گئی اور وہ اس وقت انتہائی نگہداشت میں ہے۔

شہریوں نے مسجد الحرام میں ظہر کی نماز کے بعد مقتولہ کی نماز جنازہ ادا کی اور اس کی میت کو الشرائع میں حرم شہداء قبرستان میں اس کے لیے رحمت اور مغفرت کی دعاؤں کےساتھ دفن کیا گیا۔

مقتولہ رحاب کی بہن جمیلہ الزہرانی نے انکشاف کیا کہ خاندان نے مجرم شوہر کو پولیس اسٹیشن میں دیکھا تھا۔ اسے اپنے گھناؤنے جرم پر کوئی پچھتاوا نہیں۔

اس نے مزید کہا کہ جب اس نے اپنی بہن کے قاتل کو پولیس اسٹیشن میں اپنے سامنے دیکھا تو وہ خود پر اور اپنے جذبات پر قابو نہیں رکھ سکی جہاں اس نے اسے "مجرم" کہا تاہم مجرم نےاسے کوئی جواب نہیں دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں