سوڈان: خاتون صحافی کے سیاستدان پر جوتا اچھالنے کی ویڈیو وائرل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران سوڈان میں سوشل میڈیا پر ایک سوڈانی صحافی کا ایک ویڈیو کلپ وائرل ہواہے جس میں اسے ایک سیاست دان پر اس وقت جوتا پھینکتے دکھایا گیا جب وہ ایک پریس کانفرنس کررہے تھے۔ ویڈیو پر خاتون صحافی کی حمایت اور مخالفت میں ر د عمل سامنے آیا ہے۔

یہ بات سوڈانی نیوز ایجنسی کی ایک کانفرنس کے موقع پر صحافی صفا الفحل کی مداخلت کے دوران سامنے آئی، جہاں ویڈیو فوٹیج کے مطابق اس نے التوم ہجو پر جوتا پھینک کر حاضرین کو حیران کر دیا۔

مناظر سے یہ بات بھی سامنے آئی کہ پریس آرگنائزرز کو افراتفری اور تذبذب کی حالت میں کانفرنس سے باہر نکال دیا گیا جب کہ جوتے سے حاضرین میں سے کسی کو کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

کانفرنس میں نام نہاد "چارٹر آف نیشنل ایکارڈ" کے تحت آزادی اور تبدیلی کے اعلان کی قوتوں کے نمائندوں نے شرکت کی۔

جہاں تک سیاست دان ھجو کا تعلق ہے تو انہیں کوئی نقصان نہیں پہنچا۔ وہ کافی پرسکون دکھائی دے رہا تھا۔ وہ سوڈانی انقلابی محاذ کے سابق نائب صدر اور ڈیموکریٹک یونینسٹ پارٹی کے رہنما ہیں اور وہ چارٹر پر دستخط کرنے والوں میں سے ایک تھے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ سوڈان گذشتہ پچیس اکتوبر 2021ء سے سیاسی تعطل کا شکار ہے جب مسلح افواج نے غیر معمولی اقدامات نافذ کیے اور حکومت کو تحلیل کر دیا۔ اس کے بعد سوڈان کی سول قیادت اور فوج کے درمیان تناؤ پایاجاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں