وڈیو: سعودی عرب میں بندروں کے درمیان گھمسان کا معرکہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سوشل میڈیا پر گذشتہ چند گھنٹوں کے دوران میں ایسے متعدد وڈیو کلپ سامنے آئے ہیں جن میں سعودی عرب کے ایک گاؤں عرمرم میں بندروں کی دو ٹولیوں کے بیچ گھمسان کی لڑائی دیکھی جا سکتی ہے۔ عرمرم گاؤں 'رجال المع' ضلع میں واقع ہے۔

بندروں کی ایک ٹولی معرکے کو فیصلہ کن بنانے کے لیے ایک گھر کی چھت پر چڑھ گئی۔ اس دوران میں علاقے کے لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

اس سلسلے میں بیبون بندروں کے نقصانات کا جائزہ لینے سے متعلق پروگرام کی سائنسی ٹیم کی خاتون سربراہ پاؤلا بیبسورتھ نے متاثرہ علاقوں کے مکینوں اور آبادی پر زور دیا کہ وہ بندروں کو کھانے پینے کی اشیاء نہ دیں اور ان کی طرف نہ دیکھیں۔ اس طرح وہ ان بندروں کے حملوں اور منفی اثرات سے محفوظ رہ سکیں گے۔

پاؤلا کے مطابق اہم بات ان بندروں سے دور رہنا ہے۔ اس لیے کہ جو کوئی انہیں کھانے کی چیز دے گا وہ ممکنہ طور پر ان کا نشانہ بن سکتا ہے۔ پاؤلا نے بتایا کہ بیبون بندر دیگر جانوروں سے مختلف ہوتے ہیں۔ جو کوئی انہیں کھانا پیش کرتا ہے یہ اسے اپنے خادم کی نظر سے دیکھتے ہیں۔

یاد رہے کہ مملکت میں قومی مرکز برائے ترقّیِ جنگلی حیات کے زیر انتظام زمینی ٹیموں نے چند روز قبل بیبون بندروں سے متاثر علاقوں کا سروے شروع کیا تھا۔ اس کا مقصد مملکت کے متعدد علاقوں میں بندروں کے پھیلاؤ کے مسئلے کا مناسب حل تلاش کرنا ہے۔

مذکورہ ٹیمیں 6 صوبوں میں کام کر رہی ہیں۔ اس کام کا مقصد بیبون بندروں کی تعداد میں اضافے سے ہونے والے نقصانات کا جائزہ لینا ہے۔ اس طرح ماحولیاتی، سماجی، طبی اور اقتصادی نوعیت کے ضرر پر روک لگائی جا سکے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں