جرمن پولیس نے وزیرصحت کو اغوا کرنے کی سازش ناکام بنا دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جرمنی میں پولیس نے چارجرمن شہریوں کو حراست میں لے لیا ہے۔ان پر شُبہ ہے کہ انھوں نے جرمن وزیرصحت کارل لوٹرباخ کو اغوا کرنے اور بجلی کی تنصیبات کو تباہ کرنے کی منصوبہ بندی کی تھی تاکہ ملک بھر میں برقی رو کی ترسیل منقطع کی جا سکے۔

کوبلنز پراسیکیوٹر کے دفتر کے ترجمان نے جمعرات کو جرمن نشریاتی ادارے اے آر ڈی کی اس رپورٹ کی تصدیق کی ہے کہ دوملزمان نے دوسروں کے ساتھ مل کر وفاقی وزیرصحت پر حملے کی سازش تیار کی تھی۔

اس سے قبل استغاثہ کے دفتر نے ایک بیان میں کہا تھا کہ ایک چیٹ گروپ ویرینتے پیٹریاٹن (یعنی جرمن فار یونائیٹڈ پیٹریاٹس)کے پیچھے کارفرما گروپ کا مقصد خانہ جنگی جیسے حالات پیدا کرنا اور بالآخر جرمنی میں جمہوری نظام کا تختہ الٹنا تھا۔

اس میں کہا گیا ہے کہ حکام نے بدھ کے روز متعدد جرمن ریاستوں میں 20 املاک کی تلاشی لی ہے اورمشتبہ افراد کے قبضے سے بندوقوں سمیت اسلحہ ضبط کیا ہے۔ان میں گولہ بارود اور ایک کلاشنکوف رائفل بھی شامل ہے۔اس کے علاوہ یورو اورغیر ملکی کرنسی میں نقدی کے ساتھ ساتھ سونے کی اینٹیں اور چاندی کے سکے بھی برآمد کیے گئے ہیں۔

استغاثہ کے دفتر نے بتایا کہ گروپ نے دیگرمعروف عوامی شخصیات کو اغوا کرنے کا بھی منصوبہ بنایا تھا لیکن یہ نہیں بتایا کہ اس کا ہدف اور کون سی شخصیات تھیں۔

استغاثہ نے ایک جج سے کہا ہے کہ وہ حراست میں لیے گئے چار ملزمان کے وارنٹ گرفتاری جاری کرے۔اس گروہ میں شامل پانچواں مشتبہ شخص ابھی تک مفرور ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں