روس اور یوکرین

مغرب نے نفرت کی بنیاد پر ہمارے خلاف بھرپور جنگ چھیڑ دی: روسی وزیر خارجہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یوکرین میں روس کا فوجی آپریشن آج اپنے 50 ویں روز میں داخل ہو چکا ہے۔ اس موقع پر روسی وزیر خارجہ سرگئی لاؤروف نے ایک بار پھر مغرب کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ ان کے مطابق مغربی ممالک نے روسی میڈیا اور ویب سائٹوں کے خلاف جنگ شروع کر رکھی ہے۔

لاؤروف نے یہ بات جمعرات کے روز "ڈیجیٹل بین الاقوامی تعلقات" کانفرنس کے دوران اپنے خطاب میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ روس کا فوجی آپریشن جاری ہے اور یہ آپریشن بنا کسی شک و شبہے کے اپنے مقاصد پورے کرے گا۔

روسی وزیر خارجہ کے مطابق مغرب نے یوکرین کے معاملے کو لے کر ان کے ملک کے خلاف ایک بھرپور جنگ کا اعلان کر دیا۔ لاؤروف نے زور دیا کہ ماسکو کے پاس ایسی کئی دستاویزات ہیں جن سے ثابت ہوتا ہے کہ یوکرین حیاتیاتی اسلحہ تیار کر رہا تھا۔

لاؤروف نے سوشل میڈیا پر اپنے ملک کے خلاف جنگ پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے کہا کہ روس کے خلاف پروپیگنڈے کی جنگ نے روس کے خلاف نفرت کو بڑھایا ہے۔ لاؤروف کے مطابق مغرب ہر روسی چیز سے نفرت کر رہے ہیں جن میں عوام اور کمپنیاں شامل ہیں۔

لاؤروف نے الزام عائد کیا کہ مغربی ممالک روسی ویب سائٹوں کی بندش کے ذریعے حقیقت کو پھیلنے سے روکنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ روس نے 24 فروری کو یوکرین کی اراضی پر فوجی آپریشن شروع کیا تھا۔ اس کے بعد سے متعدد مغربی ممالک جن میں امریکا سرفہرست ہے انہوں نے اپنے ہاں روس کی درجنوں سرکاری ویب سائٹوں کے علاوہ کریملن ہاؤس کے زیر انتظام سرکاری اداروں کے مستند سوشل میڈیا اکاؤنٹس کی بھی بندش کر دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں