روسی بحری جہاز’موسکوا‘ کے حادثے میں بچ جانے والے عملے کی ویڈیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بحیرہ اسود میں سب سے مشہور روسی جہاز کے ڈوبنے کے بعد روسی وزارت دفاع نے ایک ویڈیو ریکارڈنگ شائع کی ہے۔ اس ویڈیو میں بحریہ کے کمانڈر اور کروزر "موسکوا" کے ڈوبنے سے بچ جانے والوں کے درمیان ایک میٹنگ دکھائی گئی ہے۔

تقریباً بتیس سیکنڈ کی اس ویڈیو میں سمندری یونیفارم میں ملبوس مرد بحریہ کے کمانڈر نکولائی ایومینوف کے سامنے تیار پوزیشن میں کھڑے ہیں۔

وزارت دفاع کی طرف سے جاری کردہ ایک مختصر بیان کے مطابق "چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل نکولائی ایومینوف اور بحیرہ اسود کے بحری بیڑے کے کمانڈر نے سیباسٹوپول میں کروزر موسکوا کے عملے سے ملاقات کی"۔

انہوں نے ایڈمرل کو بتایا کہ کروزر کا عملہ کہ افسران، اہلکار اور ملاح بحریہ کی صفوں میں خدمات انجام دیتے رہیں گے۔"

یہ پہلی ریکارڈنگ ہے جو جمعرات کو جہاز کے ڈوبنے کے بعد مبینہ طور پر ماسکوا کے عملے کے ارکان کو دکھاتی ہیں۔

متضاد کہانیاں

روس کا دعویٰ ہے کہ بحیرہ اسود کے بحری بیڑے کا یہ بحری کمانڈ جہاز گولہ بارود کے پھٹنے سے لگنے والی آگ کی وجہ سے ڈوب گیا جبکہ یوکرین کا کہنا ہے کہ یہ میزائل حملوں سے ڈوب گیا۔

روس نے کسی جانی نقصان کی نشاندہی کیے بغیر حادثے سے قبل عملے کو نکالنے کا اعلان کیا تھا۔ جبکہ پینٹاگان کا خیال تھا کہ موسکوا کا ڈوبنا روس کے لیے ایک تکلیف دہ دھچکا ہے جو اس کے بحری بیڑے کو متاثر کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں