سعودی خاتون نے بیوہ اور مطلقہ خواتین کو لُوٹنے والے نوسرباز کو پکڑوا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ریاض میں سعودی پولیس نے سوشل میڈیا پر اشتہارات کے ذریعے دھوکے بازی اور چالبازی کی کارروائیوں کا ارتکاب کرنے والے شہری کو آخر کار گرفتار کر لیا۔ یہ نوسرباز شخص بیواؤں اور مطلقہ خواتین کو امداد کا جھانسا دے کر ان سے مال اینٹھتا تھا۔

سعودی وزارت داخلہ نے آج منگل کے روز سوشل میڈیا پر ایک وڈیو جاری کی۔ وڈیو میں یہ بتایا گیا ہے کہ کس طرح سیکورٹی فورسز کی معاون ایک خاتون نے اس مشتبہ شخص کو جال میں پھنسا کر قانون کے شکنجے میں لانے میں مدد کی۔ مذکورہ شخص بیوہ اور مطلقہ خواتین سے پیسے بٹور کر یقین دہانی کراتا تھا کہ وہ ضرورت مندوں کو امداد دینے والے اداروں یا انجمنوں میں متعلقہ کاغذی کارروائی مکمل کرا کر ان خواتین کو مالی امداد حاصل کرنے میں معاونت کرے گا۔

سیکورٹی فورس کی معاون خاتون نے بھی خود کو مالی امداد کا طالب ظاہر کیا اور پھر اپنی دستاویزات حوالے کرنے کے بہانے اس سعودی شہری سے ملاقات کا مطالبہ کیا۔ بعد ازاں اس شخص کی رہنے کی جگہ معلوم ہونے پر اسے پکڑ لیا گیا۔

یہ نوسرباز سوشل میڈیا پر اپنے اشتہارات میں دعوی کرتا تھا کہ وہ ضرورت مند افراد کو (جعلی) دستاویزات فراہم کر سکتا ہے تا کہ یہ لوگ امدادی اداروں میں متعلقہ کاغذات جمع کرا سکیں۔ ساتھ ہی یہ شخص شرط رکھتا تھا کہ اداروں سے ملنے والی مالی رقوم میں اس کا بھی حصہ ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں