روس اور یوکرین

روسی جہازوں کے امریکی بندرگاہوں میں داخلے پر پابندی لگا دیں گے: بائیڈن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی صدر جو بائیڈن نے ہفتے کے روز کہا ہے کہ روسی جہازوں کے امریکی بندرگاہوں میں داخلے پر پابندی عائد کرنے کے فیصلے پرعمل درآمد کرتے ہوئے کسی بھی روسی پرچم والے چلنے والے یا ملکیت والے جہاز کو ان کے ملک کی بندرگاہوں میں داخلےسے روک دیا جائے گا۔

برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے کہا کہ برطانیہ نے روسی فوج کے ارکان کے خلاف نئی پابندیاں جاری کی ہیں۔

جانسن نے زور دے کر کہا کہ برطانیہ یوکرین میں جنگی جرائم کے ثبوت اکٹھے کرنے میں مدد کر رہا ہے اور بکتر بند گاڑیوں سمیت مزید فوجی امداد فراہم کر رہا ہے۔

جمعرات کو بائیڈن نے یوکرین کے لیے 800 ملین ڈالر کے اضافی فوجی امدادی پیکج کا اعلان کیا تاکہ ملک کے مشرق میں اس کی جنگی صلاحیت کو بڑھایا جا سکے۔

انہوں نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر مزید کہا کہ اس امداد میں "بھاری توپ خانے کے ہتھیار، درجنوں ہاؤٹزر اور ان کے لیے گولہ بارود کے 144,000 راؤنڈز شامل ہیں۔ اس کے علاوہ وہ یوکرین کو جنگی مقاصد کے لیے ڈرونز بھی بھیجیں گے‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں