مصر : سیناء میں داعش تنظیم کے خطرناک کمانڈروں کا صفایا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

مصری حکام کی جانب سے سیناء کے علاقے کو داعش تنظیم کی باقیات سے پاک کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ اس کارروائی میں سیناء کے قبائلی اتحاد کی معاونت سے دو دیہات المطلہ اور الحسینیات کو صاف کر دیا گیا ہے۔ مزید یہ کہ داعش کے کمانڈروں کو ختم کرنے اور ان کے اڈوں پر چھاپوں کا عمل جاری ہے۔

قبائلی ذرائع نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ مذکورہ دونوں دیہات میں مصری فوج کے ساتھ کارروائیوں میں علاقے میں داعش کا سب سے خطر ناک کمانڈر مصطفی شعبان ابو دراع ہلاک کر دیا گیا۔ علاوہ ازیں داعش کے دو دیگر کمانڈروں کو بھی اس وقت موت کی نیند سلا دیا گیا جب وہ المطلہ گاؤں کی سمت فرار کی کوشش کر رہے تھے۔

ذرائع نے واضح کیا کہ داعش تنظیم کی خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد نے خود کو قبائلی افراد کے حوالے کر دیا۔ اس دوران میں داعش کی جانب سے متعدد گھروں ، راستوں اور کھیتوں میں نصب کیے گئے دھماکا خیز آلات اور بموں کو ناکارہ بنا دیا گیا۔

مصری فوج نے فروری 2018ء میں سیناء میں تکفیری جماعتوں کے مکمل خاتمے کے لیے آپریشن شروع کیا تھا۔ یہ آپریشن سیناء کے وسطی اور شمالی علاقوں کے علاوہ اطراف میں دیگر علاقوں میں بھی جاری ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں