سعودی عرب:عیدالفطرمذہبی عقیدت واحترام اور روایتی جوش وخروش سے منانے کی تیاریاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں اسلامی مقدس ماہ رمضان رخصت ہورہا ہے اورسوموار دومئی کوعید الفطرمذہبی عقیدت واحترام اور روایتی جوش وخروش سے منانے کی تیاریاں عروج پر ہیں۔عیدالفطر کی یہ تقریبات تین روز تک جاری رہیں گی۔

ہرسال دنیا بھر کے مسلمان رمضان المبارک میں انتیس یا تیس روزے رکھتے ہیں،رات کو نمازتراویح ادا کرتے ہیں اور یکم شوال المکرم کوعیدالفطرمناتے ہیں۔رمضان اسلامی ہجری تقویم کا نویں مہینہ ہے۔ہجری سال 354 یا 355 دن کے 12 ماہ پر مشتمل ہوتا ہے۔

سعودی عرب کی عدالتِ عظمیٰ نے ہفتے کی شام باضابطہ طور پراعلان کیا تھا کہ عید پیر سے شروع ہوگی۔سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق چھٹی کا تعیّن شوال کا چاند دیکھنے سے ہوتا ہے اور ہفتے کی شام شوال کا چاند نظرنہیں آیا تھا۔

شہروں ، قصبوں اور دیہات کی جامع مساجد یا عیدگاہوں میں نمازعید کی ادائی کے بعد خاندان کے افراداوردوست جشن منانے اور تحائف دینے کے لیے جمع ہوتے ہیں۔بڑے افراد چھوٹے بچّوں کونقدی کی شکل میں عیدی دیتے ہیں۔ وہ کھلونے،نئے کپڑے اور دیگر تحائف بھی دیتے ہیں۔اس کے بعدلذیذ کھانوں کی روایتی دعوتوں سے لطف اندوز ہوتے ہیں۔

عیدالفطرمسلمانوں کا ایک اجتماعی تیوہار ہے اور اس کی خوشیوں میں معاشی طور پرپسماندہ طبقات کو بھی شریک کیا جاتا ہے۔ انھیں صاحب حیثیت حضرات صدقہ فطردیتے ہیں۔اس کے علاوہ بیشتر حضرات رمضان ہی میں ضرورت مندوں کو فرض زکوٰۃ بھی ادا کرتے ہیں۔

تنظیم اسلامک ریلیف کے مطابق صدقہ فطر کی واجب الادا کم سے کم رقم قریباً دو کلوگرام گندم یا اس کے آٹے کے مساوی ہے۔سعودی عرب کی کرنسی ریال کے حساب سے اس کا فی کس تخمینہ قریباً 7 ڈالر ہے۔

عید کی شام لوگ اپنے بہترین فیشن ایبل لباس میں سیروتفریح کے لیے گھروں سے باہرجاتے ہیں۔وہ عید کے لیے خصوصی طور پر خرید کیے گئے دیدہ زیب ملبوسات زیب تن کرتے ہیں۔بعض علاقوں میں اس موقع پرآتش بازی کی جاتی ہے اور مختلف رنگارنگ پروگراموں کا انعقاد کیا جاتا ہے۔

رمضان کے اختتام پر مملکت بھر میں متعدد محفلیں اور تقریبات ہوں گی اور بہت سی مقامی چھٹیوں کے پیکج جاری کیے گئے ہیں۔

جدہ سیزن 2022

جدہ سیزن 2022 کے دوسرے ایڈیشن کا عیدالفطر کے پہلے دن آغاز ہوگا۔اس میں کئی دلچسپ ایونٹس پیش کیے جائیں گے جن سے لطف اندوز ہونے کا انتظار کیا جا سکتا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ’’ہمارے اچھے دن‘‘ کے نعرے کے تحت منعقد ہونے والے اس بڑے میلے میں قریباً 2800 سرگرمیاں شامل ہوں گی جو اگلے دوماہ کے دوران میں دستیاب ہوں گی۔

مملکت کی تفریحی صنعت اور نئے وژن کی بنیاد پر 70 باہمی تعامل پر مبنی تجربات،کھلاڑیوں کے لیے 60 سے زیادہ تفریحی پیش کشیں، سات عرب ڈرامے، دو بین الاقوامی ڈرامے، پانچ سمندری تجربات اور تقریبات اور بین الاقوامی سرکس گروپ سرک ڈو سولیل کے علاوہ چار بین الاقوامی نمائشیں، ایک بین التعامل آبشار اور زائرین کے لیے 90 سے زیادہ اسٹورز اور ریستوران ہوں گے تاکہ زائرین مختلف النوع کھانوں سے لطف اندوزہو سکیں۔

سعودی عرب کے مقبول سیاحتی مقام العلاء نے عید کے موقع پرزائرین کے لیے کئی پیکج متعارف کرانے کا اعلان کیا ہے۔العلاء کے علاوہ جدہ،الریاض، الخبراور مکہ مکرمہ سمیت مملکت کے دیگرشہروں میں عارضی قیام کی پیش کشیں کی جارہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں