ڈنمارک میں روسی سفیر جاسوس طیارے کی ڈینش فضائی حدود کی خلاف ورزی پرطلب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ڈنمارک نے روسی جاسوس طیارے کے اپنی فضائی حدود میں گھسنے کے بعد کوپن ہیگن میں متعیّن روس کے سفیر کو احتجاج کے لیے طلب کیا ہے۔

ڈینش وزیرخارجہ جیپے کوفوڈ نے اتوار کے روز سویڈن کی جانب سے اسی طرح کی خلاف ورزی کے اعلان کے ایک روز بعد کہا کہ روسی جاسوس طیارے نے ڈنمارک کی فضائی حدود کی بھی خلاف ورزی کی ہے۔

جیپے کوفورڈ نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ روسی سفیر کو کل سوموار کو وزارتِ خارجہ میں طلب کیا گیا ہے۔

ڈینش حکومت کا کہنا ہے کہ روسی طیارہ سویڈن کی فضائی حدود میں پرواز کرنے سے قبل جمعہ کو ڈنمارک کے بالٹک جزیرے بورنہولم کے مشرق میں ڈینش فضائی حدود میں داخل ہوا تھا۔

سویڈن کے دفاعی حکام نے ہفتے کے روزاس فضائی خلاف ورزی کا اعلان کیا تھا۔کوفوڈ نے یوکرین پرروس کے حملے اور اس کی نیٹو کے ساتھ کشیدگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورت حال میں یہ مکمل طورپر ناقابل قبول اورانتہائی تشویش ناک ہے۔ڈنمارک بھی معاہدہ شمالی اوقیانوس کی تنظیم کا رکن ملک ہے۔

وزیرنے ڈینش خبررساں ایجنسی رٹزو کو بتایا:’’ہمیں پورے یورپ میں ایک خاص صورت حال کاسامنا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ یقیناً یہ ایک سنگین واقعہ ہے جب ہم روس کو اپنی فضائی حدود کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیکھتے ہیں۔اس لیے ہم نے روسی سفیرکوطلب کیاہے تاکہ ہم روس پریہ نقطہ نظر واضح کر سکیں‘‘۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں