ایک خطرناک مجرم امریکی جیل سے ’ماڈل ملازم‘ کی مدد سے فرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
5 منٹس read

امریکی ایک ہفتے سے بڑی دلچسپی کے ساتھ ایک ایسے مجرم کے جیل سے فرار ہونے کی کہانی پر نظر رکھے ہوئے ہیں جسے "انتہائی خطرناک" قرار دیا گیا ہے۔ مجرم کے فرار کا یہ واقعہ ایک خاتون گارڈ کی مدد سے انجام دیا گیا جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ جیل کی بہترین اور مثالی اہلکار ہیں، مگر اب یہ پتا چلا ہے کہ 56 سالہ خاتون گارڈ اور 38 سالہ ملزم کے درمیان ’خصوصی تعلق‘ تھا۔

29 اپریل کو وکی وائٹ نے الاباما کی ایک جیل سے قیدی کیسی وائٹ کو فرار ہونے میں مدد کی۔ خیال ہے کہ دونوں کا خاندانی نام ایک ہی ہونے کے باوجود آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے۔

امریکی ریاست ایلاباما میں پولیس شیرف کے دفتر سے جاری بیان میں ان تازہ ترین معلومات کے بارے میں بتایا گیا جس کی تصدیق مفرور قیدی کیسی وائٹ کے ساتھی قیدیوں نے کی۔ کیسی وائٹ قتل کے الزامات میں قید تھے۔ ان کی مدد کرنے والی جیل اہلکار کے بارے میں کبھی کسی نے یہ نہیں سوچا کہ وہ اتنی ’چالاک‘ ہوسکتی ہیں۔

امریکی پولیس تاحال 38 سالہ کیسی وائٹ اور 56 سالہ پولیس افسر وکی وائٹ کو تلاش کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

دونوں اس وقت فرار ہوئے تھے جب وکی وائٹ قیدی کو بہ ظاہر ذہنی معائنے کے لیے لے جا رہی تھیں تو اس دوران دونوں فرار ہوئے۔ پولیس کی جانب سے یہ نہیں بتایا گیا کہ یہ رشتہ رومانوی نوعیت کا تھا یا نہیں۔

مجرم کو فرار کرنے میں مدد کرنے والی خاتون کی ماں نے WAAY31 ٹی وی چینل کو بتایا کہ میری بیٹی نے کچھ نہیں کیا۔ میں شرط لگاتی ہوں کہ اسے تیزی رفتاری سے ڈرائیونگ پر کبھی کوئی نوٹس نہیں ملا۔

وکی وائٹ امریکا میں سب سے زیادہ مطلوب افراد میں سے ایک ہیں حالانکہ علاقے کے پولیس چیف نے اسے "ماڈل ملازم" کے طور پر بیان کیا اور ڈسٹرکٹ اٹارنی نے اسے "جیل کی سب سے زیادہ قابل اعتماد شخصیت قرار دیا اور کہا کہ اکثر قیدیوں کی دوسری جیلوں میں منتقلی اس کی نگرانی میں ہوتی تھی۔

40 کلومیٹر دور

جب وکی جمعہ کی صبح فلورنس جیل میں مجرم کو لینے آئی تو اس کا کہنا تھا کہ وہ اسے عدالت میں پیش کریں گی کیونکہ اس کی نفسیاتی تشخیص کرانی ہے۔ وہ اسے قریب ہی ایک شاپنگ مال میں کھڑی کار میں لے گئی۔ تب تک مجرم کو ہتھکڑیاں لگی ہوئی تھیں۔ وکی وائٹ نے یہ تاثر نہیں پیدا ہونے دیا کہ وہ مجرم کے فرار میں اس کی مدد کررہی ہے۔ یہ واقعہ مقامی وقت کے مطابق صبح نو بجے کا ہے۔

کئی گھنٹے بعد سہ پہر ساڑھے تین بجے تک وکی اور کیسی کی غیر موجودگی کو کسی نے محسوس نہیں کیا۔

جن تفتیش کاروں نے ان کا پیچھا کیا وہ ان سے بہت دور دکھائی دے رہے تھے کیونکہ آخری بار فرار ہونے والے جمعہ کو جیل سے تقریباً 40 کلومیٹر دور ایک سرخ فورڈ ایس یو وی میں دیکھا گیا تھا۔

اس تعاقب نے علاقے کے سوشل میڈیا صارفین کی دلچسپی حاصل کی جنہوں نے اس ایجنسی پر تبصرہ کیا جس سے وکی وائٹ نے کار خریدی تھی۔

جمعے کو جب دونوں فرار ہوئے تو یہ وکی وائٹ کا کام پر آخری دن تھا۔ انھوں نے حال ہی میں اپنا گھر بیچا تھا اور اپنے ساتھیوں کو بتایا تھا کہ اب وہ اپنی زیادہ تر وقت ساحلِ سمندر پر گزارنا چاہتی ہیں۔

سروس ختم کرنے کی کوشش

پولیس کا اب یہ ماننا ہے کہ وکی وائٹ نے اس فرار میں مدد دینے کے لیے جیل کے قواعد کو توڑا اور کیسی وائٹ کو اکیلے معائنے کے لیے لے کر گئیں۔

منگل کو شیرف رک سنگلٹن نے ایک بیان میں کہا کہ ’تفتیش کاروں کو لاڈرڈیل کاؤنٹی ڈیٹینشن سینٹر سے قیدی کے ساتھیوں سے مزید معلومات حاصل ہوئی ہیں جن سے معلوم ہوا ہے کہ ان ڈائریکٹر وکی وائٹ اور قیدی کیسی وائٹ کا خصوصی تعلق تھا۔‘

’اس تعلق کے حوالے سے آزادانہ ذرائع اور تفتیش کے بعد تصدیق ہو چکی ہے۔‘

منگل کو امریکی مارشلز سروس نے ایک بیان میں کہا تھا کہ دونوں کو آخری مرتبہ ایک بھورے رنگ کی فورڈ ایج چلاتے دیکھا گیا تھا اور ان کی رجسٹریشن پلیٹ ایلاباما کی تھی۔

امریکی مارشلز سروس کی جانب سے جاری اعلامیے میں مس وائٹ کے دو فرضی نام بھی بتائے گئے ہیں ایک اپریل ڈیوس اور ایک رینی میری میکسویل۔ حکام کا کہنا ہے کہ کیسی وائٹ کو ’مسلح اور انتہائی خطرناک‘ تصور کیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں