روس اور یوکرین

کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کا یوکرین کا اچانک دورہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے اتوار کے روز روس کے حملے کے بعد یوکرین کا اچانک دورہ کیا ہے۔انھوں نے جنگ سے متاثرہ بعض علاقوں کا مشاہدہ کیا ہے اور یوکرین کے صدر ولودی میرزیلنسکی سے ملاقات کی ہے۔

ٹروڈو کے ڈائریکٹرابلاغیات کیمرون احمد نے کہا کہ وزیر اعظم میزبان صدرزیلنسکی سے ملاقات اور یوکرینی عوام کے لیے کینیڈا کی جانب سے غیرمتزلزل حمایت کے اعادے کی غرض سے یہ دورہ کررہے ہیں۔

یوکرین کے شہراِیرپن کے میئرالیکسینڈرمارکوشین نے فیس بُک پرکہا:’’مجھے ابھی کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو سے ملنے کا اعزازحاصل ہوا ہے۔وہ اپنی آنکھوں سے یہ دیکھنے کے لیے اِیرپن آئے تھے کہ روسی قابضین نے ہمارے شہرمیں کیا خوف ناک صورت حال پیدا کی ہے‘‘۔

مارکوشین نے کہا کہ ’’ٹروڈو نے جو کچھ دیکھا،اس پر وہ ہکا بکا رہ گئے تھے۔انھوں نے دیکھا کہ فوجی تنصیبات نہیں،بلکہ ارپن میں ان مکینوں کے گھرحملوں میں جل گئے اور مکمل طور پر تباہ ہو گئے ہیں جو کچھ عرصہ قبل تک زندگی سے لطف اندوزہورہے تھے اور مستقبل کے لیے ان کے اپنے منصوبے تھے‘‘۔

24فروری کو روس کے یوکرین کے خلاف جنگ شروع کرنے کے بعد دارالحکومت کیف کے نزدیک واقع شہرایرپن میں بڑی تباہی ہوئی ہے۔

یوکرینی حکام نے روسی فوج پر ملک بھرمیں شہریوں کے خلاف مظالم اور جنگی جرائم کا الزام لگایا ہےجبکہ ماسکو ان الزامات کی تردید کرتا ہے۔

ٹروڈو کی یوکرین میں یہ غیرعلانیہ آمد امریکی خاتون اوّل جل بائیڈن کے دورے کے موقع پرہوئی ہے۔وہ بھی اتوار کو اچانک یوکرین پہنچی تھیں اور انھوں نے یوکرین کی خاتون اوّل اولینا زیلینسکا سے ملاقات کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں