روس اور یوکرین

امریکی سفارت خانے کا عملہ کیف میں کام پر واپس آگیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی محکمہ خارجہ کے ایک سینیر اہلکار نے بتایا ہے کہ یوکرین میں امریکی سفیرکرسٹینا کیون اور ان کی ٹیم کل اتوارکو کیف پہنچی اور اس نے اپنا سفارتی کام شروع کردیا ہے۔ ایک ماہ قبل امریکی وزیر خارجہ انٹنی بلنکن نے یوکرین کے دارالحکومت میں امریکی سفارت خانہ جلد دوبارہ کھولنے کا وعدہ کیا تھا۔

یوکرین پر روسی کارروائی شروع ہونے سے قبل امریکا نے کیف میں موجود اپنا سفارت خانہ عارضی طور پریوکرین کے مغرب میں لویف شہر منتقل کردیا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ٹیم کا دورہ اتوار کو یورپ میں یوم فتح کی یاد کے موقعے پرشروع کیا گیا۔

امریکی وزیر خارجہ انٹنی بلنکن نے اپنے یوکرینی ہم منصب دیمیٹرو کولیبا کو کرسٹینا کیون کے دورے سے آگاہ کیا۔

ایک بیان میں وزارت خارجہ نے کہا کہ کیف میں سفارت خانے کی سرگرمیاں دوبارہ شروع ہونے سے پہلے سفارتی کام کریں گے۔

24 اپریل کو کیف دورے کے بعد بلنکن اور امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن نے یوکرین میں امریکی سفارتی موجودگی کی بتدریج واپسی کا اعلان کیا۔

24 فروری کو روس کی جانب سے یوکرین میں فوجی آپریشن شروع کرنے سے دس دن پہلے امریکی وزیر خارجہ نے اعلان کیا تھا کہ ان کے ملک نے اپنا سفارت خانہ کیف سے ملک کے مغرب میں لویف منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

واشنگٹن نے یوکرین کے دارالحکومت میں سفارت خانے کے عملے کی تعداد کو بھی کم سے کم کر دیا ہے جس کے بعد تمام غیر ضروری عملے کی روانگی اور کیف میں قونصلر سیکشن کا کام معطل کر دیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں