شیخ محمد بن زاید سے فرانسیسی صدرماکرون کی ملاقات،شیخ خلیفہ کی وفات پراظہارِتعزیت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

متحدہ عرب امارات کے نئے صدر شیخ محمد بن زید آل نہیان سے اتوار کے روز فرانسیسی ہم منصب عمانوایل ماکرون نے ابوظبی میں ملاقات کی ہے اور ان سے ان کے بھائی شیخ خلیفہ بن زاید کی وفات پر تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ وہ طویل علالت کے بعد جمعہ کو انتقال کر گئے تھے۔

ان کے علاوہ متعدد عالمی لیڈر بھی تعزیت کے لیے ابوظبی پہنچ رہے ہیں۔برطانوی وزیراعظم بورس جانسن،امریکی نائب صدرکمالاہیرس، امریکی وزیرخارجہ انٹونی بلینکن اور اسرائیلی صدر اسحاق ہرتصوغ کی بھی اتوار اور پیر کو تیل کی دولت سے مالا مال متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت ابوظبی آمد کی توقع ہے۔

ابوظبی کے طویل عرصے سے ولی عہد شیخ محمد کو ہفتے کے روز یواے ای میں شامل سات امارات کے رہنماؤں نے متفقہ ووٹ میں ملک کانیا صدرمنتخب کر لیا تھا۔وہ 2014 میں شیخ خلیفہ کےعوامی منظرنامے سے ہٹنے کے بعد سے قائدانہ کردار ادا کررہے تھے۔تب فالج کے بعد ان کی سرجری ہوئی تھی۔ابھی تک ان کی موت کی وجہ کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔

مصر، عراق، اردن، عمان اور تُونس کے صدور اور بادشاہوں اورسوڈان کے حقیقی رہنما ہفتہ کے روز تعزیت کے لیے آنے والے عالمی لیڈروں میں شامل تھے۔پاکستان کے وزیراعظم شہبازشریف بھی یو اے ای کے صدر کی وفات پر تعزیت کے لیے ابوظبی کا دورہ کررہے ہیں۔

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے نئے صدر کو مبارکباد دینے کے لیے فون کیا اور بھارت کے وزیر اعظم نریندر مودی نے ٹویٹ کرکے ان کی ’’متحرک اور وژنری قیادت‘‘ کی تعریف کی ہے۔

ماکرون اور برطانوی وزیراعظم بورس جانسن دونوں حالیہ مہینوں میں ابوظبی کا اپنا دوسرا دورہ کر رہے ہیں۔جانسن نے اس سے پہلے مارچ میں دورہ کیا تھا مگر وہ یوکرین میں روس کی جنگ کے بعد متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب کو مزید تیل نکالنے پر قائل کرنے میں ناکام رہے تھےجس کے بعد مارکیٹوں میں ہنگامہ برپا ہوگیا تھا۔

متحدہ عرب امارات نے دسمبر میں ماکرون کے گذشتہ دورے کے موقع پر80 رافیل جنگی طیاروں کے لیے 14 ارب یورو کے معاہدے پر دست خط کیے تھے۔

صدر جو بائیڈن کے دور میں امریکا کے ساتھ متحدہ عرب امارات کے تعلقات سردمہری کا شکار ہوچکے ہیں، دونوں فریقوں کے درمیان ابوظبی کے روس کے ساتھ قریبی تعلقات اور واشنگٹن کی جانب سے ایران کے ساتھ جوہری مذاکرات دوبارہ شروع ہوچکے اختلافات ہیں جن پر خلیجی ریاستوں کی جانب سے طویل عرصے سے علاقائی انتشار پیدا کرنے کا الزام ہے۔

یواے ای شیخ محمد بن زاید کی قیادت میں مشرق اوسط کی تشکیل نو میں ایک لیڈرملک کے طور پر ابھرا ہے۔اس نے اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کیے ہیں اور یمن میں ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا کے خلاف سعودی عرب کے ساتھ جنگ میں شامل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں