روس یوکرین میں نیٹو کے خلاف لڑ رہا ہے:چیچن صدر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

جمہوریہ چیچنیا کے کریملن نواز رہنما رمضان قدیروف نے کہا ہے کہ روس یوکرین میں معاہدۂ شمالی اوقیانوس کی تنظیم نیٹو کے خلاف لڑرہا ہے۔انھوں نے جرمن چانسلر اولف شُلز کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ انشقاق ذہنی (شیزوفرینیا) کا شکار ہیں اور کسی نفسیاتی مریض کی طرح کام کرتے ہیں۔

قدیروف نے نالج سوسائٹی فورم میں بدھ کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ روس یوکرین کے خلاف نہیں بلکہ نیٹو کے خلاف لڑرہا ہے جبکہ نیٹو اور مغرب یوکرین کو مسلح کر رہے ہیں۔

چیچن صدرنے جرمن چانسلرشلزکو خاص طور پرتنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ وہ ’’ کسی شیزوفرینک کی طرح کام کررہے ہیں نہ کہ سربراہ مملکت کی حیثیت سے کام کرتے ہیں۔انھیں عالمی قواعدوضوابط میں کوئی دلچسپی نہیں ہے‘‘۔

انھوں نے اپنی بات کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ ’’آج ہم یوکرینیوں اور بندیرائٹس کے خلاف نہیں لڑ رہے ہیں بلکہ ہم نیٹو کے خلاف لڑ رہے ہیں۔نیٹواور مغرب کے کرائے کے فوجی وہاں موجود ہیں۔یہی وجہ ہے کہ یہ جنگ ہمارے ملک کے لیے آسان نہیں ہے‘‘۔

لیکن ان کا کہنا تھا کہ یہ ایک بہت اچھا تجربہ ہے۔ہم ایک بار پھر ثابت کریں گے کہ روس کو شکست نہیں دی جا سکتی۔انھوں نے روسی صدرولادیمیرپوتین کی معقول پالیسیوں کی بھی تعریف کی اور کہا کہ ان کے فیصلے ہمیشہ درست ہوتے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ’’ہم اپنے صدرکی ٹھوس پالیسیوں، ان کے خلوص، ہمارے ملک اورعوام کی حقیقی خدمت پر ان کے ساتھ کھڑے ہیں اور ہر کسی کو فوراً احساس نہیں ہوتا کہ وہ (پوتین)صحیح فیصلے کرتے ہیں لیکن آخرمیں، وہ ہر بارصحیح ثابت ہوتے ہیں‘‘۔

روس کا دعویٰ ہے کہ یوکرین میں اس کے ’’خصوصی فوجی آپریشن‘‘کا مقصد اپنے پڑوسی ملک کو ’’غیرفوجی‘‘بنانا اور نازی ازم سے پاک کرنا ہے۔تاہم کیف اور اس کے مغربی اتحادی اسے بلا اشتعال حملے کا جھوٹا بہانہ قراردیتے ہیں۔

یوکرین کے خلاف جنگ شروع کرنے کے بعد ماسکو پر عایدعالمی غم و غصے اور بے مثال پابندیوں کی بوچھاڑ کے باوجود روسی صدرولادی میرپوتین بے خوف نظر آتے ہیں۔

گذشتہ ہفتے پوتین نے کہا تھا کہ مغربی ممالک روس کے مقابلے میں ماسکو پرعاید پابندیوں سے بدتر متاثر ہوئے ہیں۔ منگل کو انھوں نے ایک اور بیان میں کہا کہ یورپ یوکرین حملے کے ردعمل میں روس پر عاید کردہ اپنی پابندیوں کے نتیجے میں ’’معاشی خودکشی‘‘کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں