روس اور یوکرین

روس نے یوکرین میں لڑنے سےانکاری 100 فوجیوں کی برطرفی کی تصدیق کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

روس کی ایک عدالت نے 115 قومی محافظوں کی برطرفی کی تصدیق کردی ہے۔انھیں یوکرین میں روس کی فوجی کارروائی میں حصہ لینے سے انکارپربرطرف کردیا گیا تھا اور انھوں اپنی برطرفی کو عدالت میں چیلنج کیا تھا۔

یہ کیس یوکرین میں روس کی جنگی مہم میں شامل ہونے سے فوجیوں کے انکارکی پہلی سرکاری تصدیق بھی ہے۔روس نے یوکرین میں یہ جنگی مہم 24 فروری کو شروع کی تھی۔

روس کی جنوبی جمہوریہ کبارڈینو بلکاریا کی ایک فوجی عدالت نے جمعرات کو بتایا کہ اس نے ’’ضروری دستاویزات‘‘ کا جائزہ لیا ہے اور روسی فوج سے الگ داخلی سکیورٹی فورس نیشنل گارڈ کے حکام سے پوچھ تاچھ کی ہے۔

عدالت نے اپنے فیصلہ میں کہا کہ اس نے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ مدعاعلیہان نے’’من مانی کرتے ہوئے جان بوجھ کرسرکاری تفویض کار سے انکارکردیا۔اس لیے ان کی نظرثانی کی اپیل مسترد کی جاتی ہے‘‘۔

عدالت نے مزید کہا کہ اس معاملے کی سماعت بند کمرے میں کی گئی ہے تاکہ ’’فوجی راز‘‘افشا نہ کیے جاسکیں۔

عدالت کی پریس سروس کا حوالہ دیتے ہوئے انٹرفیکس خبر رساں ادارے نے خبردی ہے کہ ان فوجیوں نے یوکرین میں ماسکوکے’’خصوصی آپریشن‘‘سے متعلق تفویض کارانجام سے انکارکردیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں