ہمیں دور حاضر کےحالات اور تبدیلیوں کو سمجھنا ہوگا: درایہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

بدھ کو سعودی عرب میں سلام پروجیکٹ برائے ثقافتی ابلاغ کے بین الاقوامی فورمز ’درایہ‘ میں وفود کی شرکت اورتہذیبی رابطوں کے کے فروغ کے پانچویں قومی پروگرام اختتام پذیر ہوگیا۔

یہ پروگرام مسلسل چار دن تک جاری رہا، جس میں سرکاری اور سول وفود سمیت بین الاقوامی فورمز میں مملکت کی نمائندگی کرنے والی سرکاری ایجنسیوں کے متعدد عہدیداروں کی شرکت اور ذہنی امیج کے شعبوں کے متعدد ماہرین اور تہذیبی رابطوں کے شعبے کے ماہرین کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔

’درایہ‘ کے زیر اہتمام چار روزہ پروگرام میں مختلف اور متنوع موضوعات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ان موضوعات میں ذہنی شبیہ کے تصورات اور اس کے اطلاق، بین الاقوامی اداروں کی رپورٹوں میں مملکت کے مثؓبت امیج کے علاوہ ان میں شریک وفود کو درپیش چیلنجوں پر تبادلہ خیال شامل تھا۔

پروگرام میں علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر فورمز اور مواقع میں سعودی عرب کے بارے میں مثبت سوچ کو اجاگر کرنا، بین الاقوامی میڈیا سے نمٹنے کے طریقہ کار اور ڈائیلاگ اور مواصلات کے ٹولز اور طریقوں کی شناخت، سفارتی ذرائع جس میں مملکت کے بارے میں اٹھائے گئے مسائل میں بیرون ملک سعودی مندوبین کو درپیش اہم ترین سوالات کے سب سے نمایاں جوابات شامل تھے پر بات کی گئی۔

اس موقعے پر سلام پروجیکٹ برائے تہذیبی رابطہ کاری کے جنرل سپروائزر فیصل بن عبدالرحمٰن بن معمر نے اس بات پر زور دیا کہ ’درایہ‘ پروگرام ہمارے ہم وطنوں کی بیداری، عزم اور صلاحیتوں کے ساتھ تہذیبی رابطے کی ثقافت کو بہتر بنانے کے لیے کام کرتا ہے۔ اس پروگرام کے ذریعے ہم سافٹ پاور کے وسائل کو زیادہ سے زیادہ کرنے کے لیے اعتدال پر مبنی عظیم اقدار، رواداری، بقائے باہمی، زمانے کے حالات اور تبدیلیوں کو سمجھنے اور اپنے قومی مقاصد کی تکمیل کے لیے اپنے علمی پلوں کی تعمیرکی کوشش کررہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ بین الاقوامی فورمز "درایہ" میں سرکاری اور نجی اداروں کے 163 وفود نے شرکت کی اور انہوں نے پروگرام سے بھرپور استفادہ کیا۔

انہوں نے شرکت کرنے والے وفود اور مقررین کا ان کی موثر حاضری پر شکریہ بھی ادا کیا اور سعودی ویژن 2030 کی روشنی میں منصوبے کے اسٹریٹجک نقطہ نظر سے پروگرام کی اہمیت اور اس کی قومی اہمیت کو اجاگر کرنے پرزور دیا۔

سلام پروجیکٹ برائے ثقافتی مواصلات کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر ڈاکٹر فہد بن سلطان السلطان نے وضاحت کی کہ درایہ پروگرام سلام پروجیکٹ کی حکمت عملی سے نکلنے والے سب سے اہم پروگراموں میں سے ایک ہے جو شرکاء کو اپنی صلاحیتوں کو فروغ دینے کے قابل بناتا ہے۔ بین الاقوامی مواقع پر مثبت اور بااثر طریقے سے حصہ لینے کے لیے ضروری صلاحیتوں کو بڑھاتا اور انہیں ذہنی امیج اور تہذیبی رابطہ کاری کے شعبوں میں معلومات فراہم کرتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں