بیرون ملک سے انڈونیشیئن حجاج کا پہلا قافلہ مدینہ منورہ پہنچ گیا، شاندار استقبال

عالمی وبا کی وجہ سے دو برس تک بیرون ملک سے حجاج کرام کی آمد کا سلسلہ تعطل کا شکار رہا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب میں حج 1443ھ کی ادائی کے لیے پہلا غیر ملکی حج قافلہ انڈونیشیا سے مدینہ منورہ پہنچا گیا، جہاں کچھ عرصہ قیام کے بعد انڈونیشیئن عازمین حج مکہ جائیں گے جہاں وہ اگلے ماہ ہونے والے مناسک حج ادا کریں گے۔

یاد رہے کرونا وائرس وبا کے بعد سعودی حکومت نے حرمین شریفین میں داخلہ انتہائی محدود کرتے ہوئے عمرہ اور حج پر کچھ عرصے کے لئے پابندی لگا دی تھی جس کی وجہ سے بیرون ملک سے عازمین حج اور متعمرین کی آمد بند ہو گئی تھی۔

سعودی عرب کی وزارت حج وعمرہ کے سیکرٹری محمد البيجاوی نے سرکاری ٹی وی کو بتایا کہ ’’آج بروز ہفتہ ہم نے انڈونیشیا سے عازمین حجاج کا پہلے قافلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ اس کے بعد ملائیشیا اور بھارت سے حج پروازوں کا سلسلہ شروع ہو گا۔‘‘

’’ہم دو سال کے تعطل کے بعد بیرون ملک سے ضیوف الرحمان کو خوش آمدید کہتے ہوئے انتہائی خوش ہیں۔ ہم اللہ کے ان مہمانوں کی دیکھ بھال کے مکمل طور پر تیار ہیں۔‘‘

اس سال سعودی حکومت نے حج کے خواہش مند افراد کے لیے عمر کی حد 65 سال مقرر کی ہے کیونکہ عالمی وبا کی وجہ سے زیادہ بزرگ افراد کا حج کی مشقت برداشت کرنا ممکن نہیں ہے۔

عمر کے علاوہ بیرون ملک سے آنے والے حجاج کے لیے خود کو کووڈ ۱۹ سے محفوظ ہونے کا سرٹیفکیٹ بھی پیش کرنا ہو گا۔ نیز انہیں سفر سے 72 گھنٹے پہلے پی سی آر کا نتیجہ مجاز حکام کو دکھانا ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں