سعودی طلبا کی طرف سے بھارتی ملازم کے لیے الوداعی پارٹی کا اہتمام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے علاقے نجران میں ایک ہائی اسکول میں ملازمت کرنے والے بھارتی شہری ’راجو‘ نے کئی سال بعد جب خاندان سے ملنے واپسی کا فیصلہ کیا تو اسے اسکول کے طلبا کی طرف سے حیرت انگیز محبت کا مظاہرہ دیکھنے کو ملا۔

راجو نجران کے بن عثیمین سیکنڈری اسکول میں ملازمت کرتا ہے۔ اسکول کے طلبا اس کی بہت عزت کرتے ہیں اور وہ بھی بچوں کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آتا ہے۔ اس طرح بچوں اور راجو کے درمیان دوستی ہوگئی تھی۔

جب طلبا کو پتا چلا کہ راجو اپنے خاندان سے ملنے کے لیے وطن واپس جانے کی تیاری کر رہے ہیں تو طلبا نے اسکول کے پرنسپل سے بات کی۔

اسکول کے پرنسپل’علی آل سوار‘ نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ تعلیمی سال کے اختتام پر ہمارے پاس طلبا کو راغب کرنے کے لیے کئی پروگرامات اور سرگرمیاں ہوتی ہیں۔ ہم ان پروگرامات کی تیاریوں میں مصروف تھے۔

اس دوران ایک دن طلبا کا ایک گروپ میرے پاس آیا اور کہنے لگا کہ ہم ’راجو انکل‘ کے اعزاز میں پارٹی دینا چاہتے ہیں۔ میں نے طلبا کے اس پروگرام کی تائید کی اور انہیں متعلقہ سرگرمیوں کے انچارج محمد الشرمان سے رابطہ کرکے تقریب کے انتظامات کرنے کو کہا۔

انہوں نے کہا کہ مشاورت کے بعد طلبا نے طے کیا کہ ’راجو‘ کو رخصتی سے قبل وہ اپنی جیب سے کچھ رقم اکھٹی کر کے دیں گے۔ سب نے مل کر 900 ریال جمع کیے۔ اگرچہ یہ رقم زیادہ نہیں مگر اس کی علامتی اہمیت ضرور ہے۔ اس سے طلبا اور راجو کے درمیان انسانی ہمدردی کے جذبے کی عکاسی ہوتی ہے۔

تقریب کے روز طلبا نے راجو کے ساتھ گروپ فوٹو بنوائے اور اس کی حمایت میں نعرے بازی کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں