اسرائیل کاترکی میں اپنے شہریوں کے خلاف ایران کا حملہ ناکام بنانے کا دعویٰ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کے سرکاری نشریاتی ادارے کان ریڈیو نے اتوار کے روزخبردی ہے کہ سکیورٹی حکام نے گذشتہ ماہ ترکی میں اسرائیلیوں کونشانہ بنانے کے لیے ایران کے ممکنہ حملے کوناکام بنا دیا تھا۔

اسرائیلی حکام نے ترکی میں ’’ایرانی نیٹ ورک‘‘کے اس منصوبہ بندحملے کو ناکام بنانے کے لیے اپنے ترک ہم منصبوں کے ساتھ رابطہ قائم کیا تھا۔

اسرائیل نے گذشتہ ماہ اپنے شہریوں کو ترکی کے سفرکے خلاف انتباہ جاری کیا تھا کہ ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب کے کرنل صیّاد خدائی کے قتل کے ’’انتقام ‘‘میں اسرائیلیوں کو نشانہ بنایا جاسکتا ہے۔

کرنل صیّاد خدائی کو 22مئی کو تہران میں موٹرسائیکل پرسواردو حملہ آوروں نے گولی مارکر ہلاک کردیا تھا۔اس وقت وہ اپنی کارمیں سوار تھے اور کہیں جارہے تھے۔

ایرانی صدرابراہیم رئیسی نے کرنل خدائی کی موت کا بدلہ لینے کا عزم ظاہرکیا تھا اور ایرانی حکام نے اسرائیل کو اس قاتلانہ حملے کا مجرم قراردیا تھا۔

ایرانی ذرائع ابلاغ نے اس وقت خبردی تھی کہ پاسداران انقلاب نے اسرائیلی انٹیلی جنس سروس نیٹ ورک کے ارکان کوگرفتارکرلیا ہے لیکن ان کی گرفتاری کی مزید تفصیل جاری نہیں کی گئی تھی۔

نیویارک ٹائمزنے چندروز قبل ایک رپورٹ میں اسرائیلی انٹیلی جنس عہدہ دار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا تھا کہ اسرائیل نے امریکی حکام کوایک مراسلت میں آگاہ کیا ہے کہ ایرانی کرنل خدائی قتل کے پیچھے اس کا ہاتھ کارفرما تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں