بھارت :کانگریس کی لیڈرسونیاگاندھی کووِڈ سے متعلق صحت کے مسائل کے سبب اسپتال داخل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بھارت کی حزب اختلاف کی بڑی جماعت کانگریس کی لیڈر سونیا گاندھی کو کووِڈ-19 سے متعلق صحت کے مسائل کے سبب دارالحکومت نئی دہلی کے اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

کانگریس نے ایک ٹویٹ میں سونیاگاندھی کواسپتال لے جانے کی اطلاع دی ہے لیکن مزید کوئی تفصیل نہیں بتائی۔

بھارت کے سابق وزیراعظم راجیوگاندھی کی بیوہ اطالوی نژاد سونیاگاندھی کانگریس کی سب سے طویل عرصہ صدر رہی ہیں۔کانگریس نے 1947 میں برطانوی نوآبادیات سے آزادی حاصل کرنے کے بعد بھارت میں کئی دہائیوں تک حکومت کی ہے۔

مگر1990ء کے عشرے میں انتہاپسند بھارتیہ جنتا پارٹی کے دوبارہ احیاء اور عام انتخابات میں کامیابی کے نتیجے میں حکومت بنانے کے بعد کانگریس سیاسی طو پر کم زور ہوگئی تھی۔2004ء میں بھارت میں منعقدہ پارلیمانی انتخابات میں کانگریس نے حیرت انگیز کامیابی حاصل کی تھی اور اس کا سہراچھترسالہ سونیاگاندھی کے سرباندھاجاتا ہے۔

اس انتخابی کامیابی کے بعد وہ بھارت کی پہلی غیرملکی نژاد اور پہلی رومن کیتھولک وزیراعظم بن سکتی تھیں لیکن انھوں نے اعلیٰ عہدے کو ٹھکرا کراورماہرمعاشیات ڈاکٹرمنموہن سنگھ کو وزیراعظم نامزد کرکے سب کو حیران کردیا تھا۔

حالیہ برسوں کے دوران میں سونیاگاندھی صحت کے مسائل سے دوچاررہی ہیں اور وہ کئی مرتبہ علاج کے لیے امریکا جاچکی ہیں۔

وزیراعظم نریندرمودی کی ہندو قوم پرست بی جے پی نے 2014 اور 2019ء میں منعقدہ عام انتخابات میں پے درپے کامیابی حاصل کی اورمرکز سمیت کئی ریاستوں میں اپنی حکومتیں بنائی ہیں۔

کانگریس بی جے پی سے انتخابات میں شکست کے بعد سے اپنی تاریخی مقبولیت کھوچکی ہے۔اس کے سیکولروژن کے مقابلے میں بی جے پی کے انتہاپسند موقف کوتقویت ملی ہے اور اب بھارت میں ہندوانتہا پسندوں نے اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کی زندگیاں اجیرن کررکھی ہیں۔وہ آئے دن جتھوں کی شکل میں ان پرحملہ آور ہوتے اور ان کے جان ومال کو نقصان پہنچاتے رہتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں