ننھی تمارا کو دہرا صدمہ، ماں کے بعد باپ بھی حادثے میں چل بسا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

بیروت دھماکے میں ماں کو کھونے والی بچی تمارا دوہرے المیےکا شکار ہو گئی ہیں اوروالد کی حادثے میں ناگہانی موت سے انہیں ایک بار پھر سانحے سے گذرنا پڑا ہے۔

دو سال قبل تمارا کی ماں بیروت کی بندرگاہ میں ہونے والے دھماکوں میں ہلاک ہوگئی تھیں۔ تب سے تمارا کے لیے اس کا والد ہی ماں بھی تھا مگر اب وہ بھی اس دنیا میں نہیں رہا ہے۔

لبنان میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر شائع ہونے والی تفصیلات میں اس سانحے کے بارے میں بتا گیا ہے۔ دو روز قبل ایک خبر سامنے آئی تھی کہ اٹلی میں ایک ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہوگیا جس میں سوار چار ترک اور دو لبنانی کاروباری شخصیات ہلاک ہوگئیں۔ ہلاک ہونے والوں میں تمارا کے والد بھی شامل تھے۔ اس صدمے سے دوچار ہونے والی تمارا اکیلی نہیں بلکہ اس کی ایک بہن اور ایک بھائی بھی سانحے کا شکار ہیں۔

حادثے کے شکار ہونے والے ہیلی کاپٹر اور اس کے سواروں کی آخری تصویر۔
حادثے کے شکار ہونے والے ہیلی کاپٹر اور اس کے سواروں کی آخری تصویر۔

البتہ تمارا نے دو سال قبل بیروت کے دورے پر آئے فرانسیسی صدر عمانویل میکروں سے ملاقات کی تھی۔ صدر میکروں بیروت دھماکوں کے بعد لبنان کے دورے پر آئے اور انہوں نے اس قیامت خیز تباہی کے متاثرین سے ملاقات کی تھی۔

سخت تلاش کے بعد اطالوی حکام نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ انہیں ہیلی کاپٹر کا ملبہ اور اس میں سوار افراد کی لاشیں ملی ہیں۔

هالة اور طارق طياح
هالة اور طارق طياح

طیارے کے لاپتہ ہونے کے پہلے لمحات سے لبنانیوں نے دو لبنانی مسافروں، شادی کریدی اور طارق طیاح کی گم شدگی کے بارے میں بات کرنا شروع کر دی تھی۔

60 سالہ طارق طیاح 4 اگست 2020 کو بیروت کی بندرگاہ پر ہونے والے دھماکے میں اپنی بیوی، جیولری ڈیزائنر ہالا طیاح کو کھو بیٹھے تھے۔ ہالہ سے ان کے تین بچے تمارا اور ٹیا ماریہ شامل ہیں۔

لبنانی تمارا کو جانتے ہیں۔ خاص طور پر اس وقت جب فرانسیسی صدر عمانویل میکروں بندرگاہ میں ہونے والے دھماکے کے سانحے کے بعد لبنان گئے تھے، جہاں انہوں نے دھماکے کی یاد میں دیودار کا درخت لگاتے ہوئے تمارا سے ملاقات کی تھی۔

سوشل میڈیا پرطیاح خاندان کے ساتھ پیش آنے والے سانحے پر اپنے دکھ کا اظہار کر رہا ہے۔ شہریوں نے ایک تصویر دوبارہ شیئر کی جسے تمارا نے اپنے انسٹاگرام پیج پر پوسٹ کیا تھا۔ تصویر میں چھوٹی بچی کو اپنے والد سے گلے لگاتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ تصویر میں نیچے دیے کیپشن میں لکھا ہے کہ "پاپا میں آپ سے بہت پیار کرتی ہوں۔ واقعی میں نہیں جانتی کہ میں نے اس کے مستحق ہونے کے لیے کیا کیا۔ ابا جان، میں آپ سے بہت پیار کرتی ہوں۔"

میکروں نے تمارا کو دوبارہ تسلی دینے کے لیے پھر پہل کی۔ انہوں نے فیس بک پر فرانسیسی صدر کے آفیشل پیج کےذریعے تمارا کے لیے تعزیت کا پیغام شائع کیا۔ انہوں نے لکھا کہ "یکم ستمبر 2020 کو میں بیروت میں تھا۔ میں نے بہت سے واقعات سنے، لیکن ایک نے مجھے بہت متاثر کیا۔ یہ تمارا کی بات تھی۔ جس کا سب سے قیمتی اثاثہ اس کی ماں اسے چھن گیا تھا۔ اب اٹلی میں ہیلی کاپٹر حادثے میں تمارا کے والد کے مارے جانے پر دوہرا صدمہ پہنچا ہے۔ میں اس درد، کرب اور صدمے کو محسوس کرسکتا ہوں اور میں متاثرہ خاندان کے ساتھ اس دکھ میں شریک ہوں۔"

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں