امریکی صدر بائیڈن کایوکرین کوایک ارب ڈالرمالیت کا نیا’اسلحہ پیکج‘مہیّا کرنے کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

امریکی صدر جو بائیڈن نے صدر ولودیمیر زیلنسکی کے ساتھ فون پر گفتگو میں روس کے حملے کے خلاف یوکرین کو اسلحہ اور گولہ بارود پر مشتمل ایک نیا امدادی پیکج مہیّا کرنے کا اعلان کیا ہے۔

بائیڈن نے امریکا کی جانب سے روس کی جارحیت کے خلاف یوکرین کی حمایت کا بھی اعادہ کیا ہے اور کہاکہ ایک ارب ڈالرمالیت کے اسلحے کے پیکج میں مزید توپ خانہ، ساحلی جہازشکن دفاعی نظام اور جدید راکٹ سسٹم کے لیے گولہ بارود شامل ہے۔اس راکٹ سسٹم کو یوکرینی فوج پہلے ہی استعمال کررہی ہے۔

وائٹ ہاؤس کے ایک بیان کے مطابق فون کال میں بائیڈن نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ امریکا یوکرین کے ساتھ کھڑا رہے گا کیونکہ وہ اپنی جمہوریت اور روس کی بلا اشتعال جارحیت کے مقابلے میں اپنی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت کا دفاع کررہا ہے۔

بائیڈن نے یوکرین کے لیے ساڑھے22 کروڑ ڈالرمالیت کی انسانی امداد کا بھی اعلان کیا ہے۔یہ رقم خوراک، پینے کے پانی، ادویہ ،طِبّی سامان اور دیگرضروری اشیاء مہیّا کرنے پر صرف کی جائے گی۔

بائیڈن نے کہا کہ یوکرینی عوام کی بہادری،دلیری اور پختہ عزم دنیا کو مسلسل متاثر کررہا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی صدرنے گذشتہ جمعرات کو بھی یوکرین کے لیے 80 کروڑ ڈالر کی نئی فوجی امداد دینے کااعلان کیا تھا۔اب یہ واضح نہیں کہ ان کی اعلان کردہ فوجی امداد اس کے علاوہ ہے یا یہی یا اس کا کچھ حصہ ہے۔

بائیڈن نے تب ایک سوال کے جواب میں کہا تھاکہ واشنگٹن یوکرین کو ایک طویل عرصے تک اسلحہ مہیا کرنے کی صلاحیت رکھتاہے۔امریکی صدرنےروسی حملے کا شکار یوکرین کو 50 کروڑ ڈالر کی اقتصادی امداد دینے کا بھی وعدہ کیا تھا

امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے الگ سے ایک بیان میں بتایا تھا کہ یوکرین کو فوجی امداد کی مد میں درج ذیل ہتھیار اور گولہ بارودمہیا کیے جارہے ہیں:

155 ملی میٹرکی ہواِٹزر72 توپیں اور 144,000 توپوں کے گولے۔

155 ملی میٹرہواِٹزرتوپوں کو کھینچنے کے لیے72 ٹیکٹیکل گاڑیاں ۔

121سے زیادہ فینکس گھوسٹ ٹیکٹیکل بغیرانسان فضائی نظام۔

فیلڈ آلات اور فاضل پرزہ جات۔

پینٹاگون کے پریس سیکرٹری جان کربی کے مطابق بائیڈن انتظامیہ کی جانب سے یوکرین کے لیے امریکاکی فوجی امداد کی مجموعی مالیت 4 ارب ڈالر سے متجاوز ہوچکی ہے۔ 24 فروری کو روس کے بلا اشتعال حملے کے آغاز سے اب تک امریکا کی جانب سے یوکرین کوقریباً 3.4 ارب ڈالر کی امداد مہیا کی جاچکی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں