سعودی عرب موسمیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے تعاون کر رہا ہے: الجبیر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے وزیر مملکت اور موسمیاتی تبدیلی کے خصوصی ایلچی عادل بن احمد الجبیر نے کہا ہے ’’کہ مُملکت ماحولیاتی تبدیلی سے نمٹنے کے لیے تمام بین الاقوامی اور علاقائی شراکت داروں کے ساتھ تعاون کے لیے پرعزم ہے۔‘‘

ان کا کہنا تھا کہ ان کا ملک آنے والی نسلوں کی خاطر ایک بہتر ماحول پیدا کرنے کے لیے عالمی اہداف کے حصول اور ماحولیاتی تبدیلی کے اہداف کی تکیمل کے لیے مؤثر طریقے سے کام کر رہی ہے۔

عادل الجبیر نے ان خیالات کا اظہار توانائی اور ماحولیاتی تبدیلی پر بڑے اقتصادی فورم (MEF) میں شرکت کے موقع پر کیا۔ یہ اجلاس امریکی صدر جو بائیڈن کی دعوت پر بلایا گیا تھا جس میں سعودی عرب سے عادل الجبیر کی قیادت میں وفد نے شرکت کی۔

انہوں نے اس اہم سربراہی اجلاس کی میزبانی پر امریکی صدر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ویڈیو لنک کے ذریعے سعودی عرب کی نمائندگی کی۔ یہ اجلاس ایک ایسے وقت میں منعقد ہوا جب دنیا کو موسمیاتی تبدیلی کے چیلنجز کا سامنا ہے۔

انہوں نے مشترکہ اور مؤثر بین الاقوامی ردعمل پر سنجیدگی سے کام کرنے، موسمیاتی تغیر کا مقابلہ کرنے کے لیے تمام کوششوں کو مجتمع، کم ترقی یافتہ ممالک کو درپیش خصوصی حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے موسمیاتی تبدیلی کی پالیسیوں کے منفی اثرات کا مقابلہ کرنے کے لیے ان کی مدد کرنے پر زور دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں