مقدس مقام منیٰ کا سارا بنیادی ڈھانچہ از سر نو ترتیب دیا جا رہا ہے: وزارت حج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے نائب وزیر حج وعمرہ ڈاکٹر عبدالفتاح مشاط نے بتایا ہے کہ مناسک حج کے اہم مقام منیٰ سارا بنیادی ڈھانچہ از سر نو ترتیب دیا جا رہا ہے۔

خدام الحجاج اداروں اور اندرون ملک حج منظم کرنے والی کمپنیوں کے وسیع البنیاد اجلاس سے جمعہ کے روز خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر مشاط نے بتایا کہ حج سیزن کے بعد اندرون ملک حج کی تنظیم میں کام کرنے والے تمام پلیٹ فارمز کے ڈھانچے کو بھی از سر نو دیکھا جائے گا، ضیوف الرحمان کی میزبانی اور خدمت کا فریضہ انجام دینے والی کمپنیوں کی کارکردگی کا جائزہ لے کر آئندہ ان کی طرف سے فراہم کی جانے والے خدمات میں بہتری پیدا کی کوشش کی جائے گی۔ اس جائزے کا مقصد کسی کو سزا یا جرمانہ کرنا ہر گز ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ حج کے دوران اللہ کے مہمانوں کو پیش آنے والے تمام چیلنجز سے انہیں آگاہ اور اس کا حل تلاش کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی کیونکہ کئی حاجی پہلی مرتبہ یہ فریضہ انجام دے رہے ہوتے ہیں۔ وزارت حج کے لیے اس حج سیزن کے دوران مختصر ٹیم کے ساتھ اللہ کے مہمانوں کی کما حقہ خدمت کرنا سب سے اہم بات ہے۔ اس کام میں ہمیں کوارڈی نیشن کونسل کا تعاون بھی حاصل رہتا ہے۔

ڈاکٹر مشاط نے واضح کیا کہ حجاج کرام کی امنگوں کو بہتر انداز میں پروان چڑھانے اور ان کی راہنمائی کے لئے ابلاغی لوازمہ تیار کرنا اچھی بات ہے۔ اس کی مدد سے حجاج کی توقعات کا درجہ کسی حد تک بڑھ جاتا ہے اور ابلاغی مواد یقیناً اس ضمن میں انتہائی اہم کردار ادا کرتا ہے۔ جن طریقوں پر عمل کیا جا رہا ہے اس کی درجہ بندی کی ایک مکمل فائل تیار کی جائے گی۔

اس سیزن میں بھی خفیہ مہمان کے ذریعے حاجیوں کے اطیمنان کا درجہ چیک کیا جائے گا، گذشتہ برس بھی 22 ہزار اندرون ملک حجاج نے خدمات کے جائزہ سروے میں حصہ لیا۔ حاجیوں کے اطمینان کا درجہ منفی سے بہتر تھا اور جس میں حجاج نے بڑے پیمانے پر انتظامات کے حوالے اپنی پسندیدگی کا اظہار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں