ایتھوپیا کی فوج نے 7 سوڈانی فوجیوں سمیت 8 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سوڈان کی مسلح افواج کے سرکاری ترجمان بریگیڈیئر جنرل نبیل عبداللہ نے ایتھوپیا کی فوج پر الزام عائد کیا کہ اس نے سات سوڈانی فوجیوں اورایک زیر حراست شہری کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ اس کے بعد مقتولین کواپنے شہریوں کے سامنے پیش کیا۔

سوڈانی فوج کی طرف سے جاری کردہ سرکاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ایتھوپیا کا رویہ تمام بین الاقوامی اور انسانی قوانین اور اصولوں سے مطابقت نہیں رکھتا۔

بیان میں اس بات پر زور دیا گیا کہ یہ غدارانہ طرز عمل ناقابل قبول ہوگا اور اس رویے کا جواب دیا جائے گا۔

حالیہ برسوں میں سوڈان اور ایتھوپیا کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے، جس کی وجہ ٹاگرائے کے علاقے، شمالی ایتھوپیا، اور ایتھوپیا کی جانب سے نیل پر ایک بڑے ہائیڈرو الیکٹرک ڈیم کی تعمیر بتائی جاتی ہے۔

سوڈان اور پڑوسی ملک ایتھوپیا کےدرمیان ہوالی سرحدی جھڑپوں میں ہزاروں افراد نقل مکان پرمجبور ہوئے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں