سعودی عرب کا یمن میں 40 کروڑڈالرمالیت کے ترقیاتی منصوبوں کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب نے یمن کے لیے 40 کروڑ ڈالر مالیت کے ترقیاتی منصوبوں کے پیکج کا اعلان کیا ہے۔یہ منصوبے سعودی ترقیاتی اور تعمیرِنو پروگرام کے ذریعے مکمل کیے جائیں گے۔

سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان نے اس امدادی پیکج کا اعلان یمن کی صدارتی قیادت کونسل کے صدررشاد العلیمی کے ساتھ ملاقات میں کیا ہے۔

العربیہ کی ایک رپورٹ کے مطابق توانائی، نقل و حمل، تعلیم، پانی اور صحت کی دیکھ بھال سمیت مختلف شعبوں میں ان ترقیاتی منصوبوں پر عمل درآمد کیا جائے گا اور ان کا مقصد یمن کی سیاسی،اقتصادی اور سماجی سطح پر مدد کرنا ہے۔

مملکت نے بجلی گھر چلانے اور یمنی عوام کی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد کے لیے تیل کے مشتقات مہیا کرنے کی غرض سے 20 کروڑ ڈالرکی کی امداد کی بھی پیش کش کی ہے۔

ملاقات میں شہزادہ خالد اور رشادعلیمی نے یمن میں حالیہ پیش رفت اور جنگ زدہ ملک میں جامع سیاسی حل تک پہنچنے کے لیے یمن کے تمام عناصرکو متحد کرنے کی غرض سے صدارتی قیادت کونسل کی کوششوں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

اقوام متحدہ کے مطابق یمن میں گذشتہ آٹھ سال سے جاری تنازع میں ڈیڑھ لاکھ سے زیادہ افراد ہلاک اور لاکھوں شہری بے گھر ہوچکے ہیں۔جون کے اوائل میں عرب دنیا کےاس غریب ملک میں متحارب فریقوں نے جنگ بندی کی مدت میں دوماہ کی توسیع سے اتفاق کیا تھا۔اس جنگ پر اپریل سے عمل درآمد کیا جارہا ہے۔امدادی اداروں اور مغربی حکومتوں کا کہنا ہے کہ اس کے نتیجے میں لڑائی میں نمایاں کمی آئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں