.

متحدہ عرب امارات کا’ایک چین‘ پالیسی کے احترام کی اہمیت پرزور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی وزارتِ خارجہ نے بیجنگ کے’ایک چین‘اصول کے احترام کی تصدیق کی ہے۔اس نے یہ بیان امریکی ایوان نمایندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی کے تائیوان کے متنازع دورے کے بعد جاری کیا ہے۔

متحدہ عرب امارات نے اپنے بیان میں’’استحکام اور بین الاقوامی امن پرکسی بھی اشتعال انگیز دورے کے اثرات پر اپنی تشویش کااظہارکیا ہے‘‘۔اس کا پیلوسی کے تائیوان کے دورے کی طرف اشارہ تھا۔

وزارتِ خارجہ اور بین الاقوامی تعاون کی جانب سے جمعرات کو جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ یواے ای ’’چین کی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت کی حمایت کی تصدیق کی ہے‘‘۔

دریں اثناء مشرقِ اوسط کے لیےامریکا کی اعلیٰ سفارت کار نے خطےمیں چین کے بڑھتے ہوئے اثرورسوخ کے خلاف خبردار کرتے ہوئے کہاکہ اس پرہمیں توجہ مبذول کرنے کی ضرورت ہے۔

معاون وزیرخارجہ برائے مشرق قریب امورباربرا لیف نے امریکی قانون سازوں کوبتایا کہ ’’ہمیں اقتصادی سرگرمیوں کے اس بڑھتے ہوئے حجم میں شور کے اشارے کو سمجھنے میں محتاط رہنا چاہیے لیکن ہمیں ایسے رجحانات سے بھی ہم آہنگ رہنا چاہیے جو امریکی مفادات پر براہ راست اثراندازہوسکتے ہیں‘‘۔

نینسی پیلوسی نے چین کی دھمکیوں کے باوجود منگل کو تائیوان کا دورہ کیا ہے اور وہ 1997 کے بعد تائیوان کا دورے کرنے والی اعلیٰ منتخب امریکی عہدہ داربن گئی ہیں۔

چین نے باربار یہ دھمکی دی تھی کہ اگر پیلوسی نے دورہ کیا تو وہ فوجی کارروائی کرسکتا ہے۔تائپے کی وزارت دفاع نے بیجنگ کی افواج کی جانب سے بڑے پیمانے پر فوجی مشقوں کے بارے میں اپنی تازہ بریفنگ میں کہا کہ چین نے جمعرات کو آبنائے تائیوان سے نیچے چلنے والی ’’درمیانی لائن‘‘کے پار 22 لڑاکا طیارے بھیجے ہیں۔

وزارت قومی دفاع نے اپنی ویب سائٹ پرایک اپ ڈیٹ میں کہا کہ جیٹ طیاروں کا سراغ لگانے کے لیے’’فضائی دفاعی میزائل نظام‘‘نصب کیے گئے تھے اور ریڈیوپر وارننگ نشر کی گئی تھی۔درمیانی لکیرغیرسرکاری لیکن بڑی حد تک حدفاصل ہے۔یہ آبنائے تائیوان کے وسط میں چلتی ہے اورتائیوان اور چین کو الگ کرتی ہے۔چین کے فوجی طیارے اسے شاذونادر ہی عبور کرتے ہیں۔

امریکی ایوان نمایندگان کی اسپیکرپیلوسی کے جزیرے کے دورے کے بعد چین نے بین الاقوامی جہاز رانی کی اہم گذرگاہ پر طاقت کا مظاہرہ کیا ہے اور ایک طرح سے تائیوان کو محاصرے میں لے لیا تھا۔یہ اس کی اب تک کی سب سے بڑی فوجی مشقیں ہیں۔

یہ مشقیں اتوار تک جاری رہیں گی اورتائیوان کے آس پاس کے متعدد زونز میں کی جائیں گی-ساحل سے صرف 20 کلومیٹر (12 میل) کے اندرکچھ مقامات پرحربی تیاریوں کا مظاہرہ کیا جائے گا اور ہتھیاروں کی جانچ کی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں