.

چاڈ کی سرحد پر قتل عام، 18 سوڈانی شہری قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوڈان کے شہر الجنینا کے شمال میں مسلح گروہوں کے حملوں میں 18 افراد مارے گئے۔

العربیہ اور الحدث کے نامہ نگاروں کے مراسلوں کے مطابق ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ چاڈ کی سرحد سے ملیشیاؤں نے ایل جینینا کے شمال میں واقع بیر سلیبہ کے علاقے میں 18 چرواہوں اور خانہ بدوشوں کو ہلاک اور 15 کو زخمی کر دیا۔ اس دوران مسلح افراد نے تقریباً 80 اونٹ لوٹ لیے۔"

درایں اثنا سوڈان کی خودمختار کونسل کے نائب محمد حمدان دقلو جنہوں نے ہلاک شدگان کی آخری رسومات میں شرکت کی نے کہا کہ ہم نے اپنی سرحدوں پر چاڈ کے حملوں کی وجہ سے سوڈانی سلامتی اور دفاعی کونسل کے ہنگامی اجلاس کی درخواست کی تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ سوڈان، چاڈ کے ساتھ اپنی سرحدوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے سخت فیصلے کرے گا۔

'سوڈان کی خودمختاری کی خلاف ورزی'

ان کا خیال تھا کہ چاڈ کی سرحد پر ہونے والا قتل عام سوڈان کی خودمختاری کی خلاف ورزی ہے۔

یہ قتل عام اس وقت ہوا جب خود مختاری کونسل کے نائب صدر محمد حمدان دقلو نے جمعرات کو چاڈ کے صدر محمد دیبی این جمینا کے ساتھ بات چیت کی۔ وہ ایک اعلیٰ سطحی فوجی وفد کے ہمراہ مغربی دارفور سے آئے تھے۔

جمعرات کو چاڈ کی ملٹری کونسل کے سربراہ محمد ادریس دیبی نے حمیدتی کا استقبال کیا، جنہوں نے ایک پریس بیان میں کہا کہ دیبی کے ساتھ ہونے والی بات چیت میں سکیورٹی امور، سرحدی مسائل، اقتصادی تعاون اور چاڈ کے بندرگاہ سے فائدہ اٹھانے کے امکانات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں