الجزائر کی دو ریاستوں میں خوفناک آتش زدگی، 26 افراد ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الجزائر کے وزیر داخلہ کامل بلجود نےبتایا ہے کہ ملک کی دو ریاستوں طارف اور سطیف میں خوفناک آتش زدگی کے نتیجے میں ہلاکتوں کی تعداد 26 ہوگئی ہے جب کہ درجنوں افراد زخمی ہوئے ہیں۔

سرکاری ٹی وی پر نشر ایک بیان میں بلجود نے آتشزدگی کے متاثرین کے اہل خانہ سے تعزیت کی۔ انہوں نے بتایا کہ طارف میں چوبیس افراد ہلاک جب کہ سطیف میں دو لوگ مارے گئے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ شہری دفاع کے 700 سے زائد کارکن اور درجنوں ٹرک آگ بجھانے کے لیے کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔

انہوں نے متنبہ کیا کہ کچھ شہری اپنی املاک کو بچانے کے لیے آگ کا خطرہ مول لے رہے ہیں اور شہریوں سے مطالبہ کیا کہ آگ سے خطرے والے مقامات کو خالی کرنے کے لیے حکام کی ہدایات پر عمل کریں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہم آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ زیادہ درجہ حرارت اور ہوائیں ریسکیو آپریشن میں رکاوٹ بن رہی ہیں۔ ریاست الطارف باقی بلیک پوائنٹ بن چکا ہے اور ریاست کے تمام وسائل آگ پر قابو پانے کے لیے استعمال کیے جا رہے ہیں۔

وزیر داخلہ نے نشاندہی کی کہ اس ماہ کے دوران ملک میں 106 مقامات پر آگ لگی۔

ان کا کہنا تھا کہ آگ بجھانے کے لیے چارٹر کیا گیا روسی طیارہ چند روز قبل گر گیا تھا۔

قبل ازیں الجزائر میں قومی صنفی خدمات نے بدھ کے روزالجزائر کے مشرق میں خاص طور پر ریاست کالا اور انابا کی ریاستوں کو ملانے والی قومی سڑک نمبر 84A پر ایک بس میں آگ لگنے سے 8 افراد کی موت کی اطلاع دی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں