جوہری معاہدے کی بحالی خامنہ ای کی قاتل حکومت کو مضبوط کرے گی:پومپیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سابق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے بدھ کے روز زور دے کر کہا ہے کہ جو بائیڈن انتظامیہ کی ایرانی جوہری معاہدے کی بحالی قاتل خامنہ ای کی حکومت کو مضبوط کرنا ہے۔

انہوں نے اپنے ’ٹویٹر‘ اکاؤنٹ پر پوسٹ کی گئی ایک ٹویٹ میں لکھا "ویانا سے آنے والی خبریں بہت پریشان کن ہیں کیونکہ بائیڈن کی ٹیم ناکام ایران معاہدے کو بحال کرنے کے قریب ہے۔"

انہوں نے مزید کہاکہ پہلے بائیڈن طالبان کو واپس لائے اور اب وہ خامنہ ای کی قاتل حکومت کو بااختیار بنا رہے ہیں۔

امریکا کی قومی سلامتی کونسل نے منگل کو قبل ازیں اعلان کیا تھا کہ تہران نے حساس فائلوں میں رعایت دی ہے۔

لیکن ایک سینیر امریکی اہلکار نے زور دے کر کہا کہ ابھی تک نئے جوہری معاہدے تک پہنچنے کا امکان واضح نہیں ہے۔

اس اہلکار نے جس نے معاملے کی حساسیت کے پیش نظر اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بات کی منگل کو مزید کہا کہ واشنگٹن اور تہران کے درمیان خلیج اب بھی موجود ہے۔

تاہم انھوں نے ساتھ ہی یہ بھی واضح کیا کہ تہران نے جوہری معاہدے کو بحال کرنے کے لیے بعض بنیادی شرائط کو ترک کر دیا ہے۔ان میں بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کی تحقیقات کو ختم کرنے کی شرط کو ترک کرنا بھی شامل ہے۔

درایں اثنا یورپی یونین کے خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزپ بوریل نےکہا ہے کہ جوہری مذاکرات میں حصہ لینے والے بیشتر ممالک نے یورپی متن یا تجویز سے اتفاق کیا ہے۔

انہوں نے اسپانوی ٹیلی ویژن کے ساتھ ایک انٹرویو میں مزید کہا کہ ان میں سے اکثر متفق ہیں، لیکن میرے پاس ابھی تک امریکا کی طرف سے کوئی ردعمل نہیں ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں