’ٹرین حادثے کے زخمیوں کی مرہم پٹی کرتے وقت بیٹی کی لاش سامنے آئی تو کلیجہ پھٹ گیا‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصری ڈاکٹر کے لیے قسمت کے تضادات آسان نہیں تھے جو گذشتہ روز مصر کی شرقیہ گورنری میں مسافر بس کے ساتھ ٹرین کے تصادم میں زخمیوں کو بچانے کے لیے پہنچے۔

فاقوس سنٹرل اسپتال کے ایمرجنسی فزیشن ڈاکٹر علاء عبدالسلام اس وقت حیران رہ گئے جب وہ ایک ایک کر کے زخمیوں کو لے جا رہے تھے تو انہوں نے دیکھا کہ مرنے والوں میں ان کی بیٹی بھی شامل تھی۔

جواں سال بیٹی کی لاش دیکھتے ہی ڈاکٹر شدید صدمے کا شکار ہو گیا۔ لاش دیکھ کر آنکھوں سے آنسو جاری ہو گئے۔ کچھ لوگوں نے تو ڈاکٹر کو کچھ بڑبڑاتے بھی سنا کیوں کہ ان کی بات سمجھ نہیں آ رہی تھی۔

جائے حادثہ
جائے حادثہ

معلومات کے مطابق لڑکی اسپتال پہنچتے ہی دم توڑ گئی، جب کہ اس کے والد اسے بچانے میں ناکام رہے۔

بتایا جاتا ہے کہ حادثے میں زخمی ہونے والوں میں ڈاکٹر کے اہل خانہ بھی شامل تھے، جس کے باعث ان کی بیٹی کی موت واقع ہوئی، جب کہ ان کی اہلیہ اپنے بچوں سمیت تشویشناک حالت میں انتہائی نگہداشت میں ہیں۔

شرقیہ گورنریٹ کے محکمہ فاقوس پولیس اسٹیشن سے منسلک اکیاد گاؤں کی کراسنگ کے قریب ایک منی بس سے ٹرین کے تصادم کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 3 ہو گئی، جب کہ حادثے کے نتیجے میں 10دیگر افراد کے زخمی ہونے کی تصدیق کی گئی۔

تینوں لاشوں کو بھی فاقوس سنٹرل اسپتال کے مردہ خانے میں منتقل کر دیا گیا۔ حکام نے حادثے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں