جنسی ہراسگی اور بد عنوانی کے الزامات، اسرائیلی سفیر مراکش سے واپس بلا لیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

اسرائیل کو مراکش سے اپنا سفیر واپس بلانا پڑ گیا ہے۔ اسرائیلی سفیر پر الزام ہے کہ اس نے مراکشی خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کی کوششی کی، نیز مراکش کی طرف سے اسرائیلی قومی دن کی مناسبت سے دیے گئے تحائف میں بد عنوانی کا ارتکاب کیا۔

سفیر کو واپس بلا لیا گیا ہے اس بارے میں تحقیقات قور ضروری ہوا تو ٹرائل بھی ہو گا۔ اسرائیلی سفارتی ذرائع نے بھی اس امر کی تصدیق کی ہے کہ سفیر ڈیود گورین پر یہ الزامات لگے ہیں اور اب اس کے خلاف تحقیقات جاری ہیں۔ تاہم اسرائیلی وزارت خارجہ نے سرکاری طور پر اس بارے میں کوئی بات نہیں کی ہے۔

ڈیوڈ گورین اس سے پہلے مصر میں سفیر رہ چکا ہے اب 2020 سے اسرائیل کے لیے متحدہ امارات، بحرین اور مراکش کے ساتھ شروع ہونے والے سفارتی تعلقات کے بعد گورین کو مراکش بھیجا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں