یواے ای : جج نے ڈینش ٹیکس فراڈ کیس کے مرکزی ملزم کی حوالگی مسترد کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

متحدہ عرب امارات میں ایک جج نے پیر کے روز ڈینش ڈیویڈنڈ ٹیکس فراڈ کیس کے مرکزی ملزم برطانوی شہری سنجے شاہ کی ڈنمارک حوالگی مسترد کردی ہے۔

ڈینش حکام نے جون میں دبئی میں گرفتار کیے گئے شاہ کی حوالگی کی درخواست دائرکی تھی تاکہ وہ اس کے خلاف دُہرے ٹیکس کی بازیافت کے لیے ایک جعلی ٹریڈنگ اسکیم میں مبینہ طور پرملوث ہونے پر قانونی چارہ جوئی کرسکیں۔اس اسکیم کو’’کم ایکس‘‘ ٹریڈنگ کے نام سے جاناجاتا ہے۔

سنجے شاہ پر شبہ ہے کہ وہ ایک ایسی اسکیم چلا رہے ہیں جس کے تحت دنیا بھر کے سرمایہ کاروں اور کمپنیوں کی جانب سے 9 ارب ڈینش کراؤنز(1.23 ارب ڈالر) سے زیادہ مالیت کے ڈیویڈنڈ ٹیکس کی واپسی کے لیے ڈینش ٹریژری میں درخواستیں جمع کرائی گئی ہیں۔تاہم شاہ کسی بھی غلط کاری کی تردید کرتے ہیں۔فوری طورپر یہ واضح نہیں ہوا کہ عدالت نے ان کی حوالگی کیوں مسترد کی ہے۔

شاہ کے وکیل علی الزرونی نے کہا کہ سرکاری استغاثہ 30 دن کے اندر اس فیصلے کے خلاف اپیل دائر کر سکتا ہے۔ عدالتی فیصلے پرمتحدہ عرب امارات کے حکام یا ڈینش وزارت انصاف کی جانب سے فوری طور پر کوئی تبصرہ نہیں کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں