الزبتھ اور امریکی صدور،ٹرمپ نے پروٹوکول توڑا،بائیڈن نےملکہ کا موازنہ اپنی ماں سے کیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

آخری امریکی صدر جن کی آنجہانی ہوجانے والی ملکہ الزبتھ کے ساتھ ملاقات ہوئی وہ جو بائیڈن ہیں۔ انہوں نے جون 2021 میں ونڈسر کیسل میں ان کے ساتھ چائے پی تھی۔ اس ملاقات میں انہوں نے روسی صدر ولادیمیر پوتین اور چینی صدر شی جن پنگ کے بارے میں گپ شپ کی۔

ملاقات کے بعد صحافیوں سے بات کرتےہوئے جوبائیڈن نے کہا کہ "انہوں [ملکہ] نے مجھے میری ماں کی یاد دلائی، مجھے نہیں لگتا کہ یہ ان کی توہین ہوگی" بائیڈن نے بعد میں نامہ نگاروں کو بتایا کہ ملکہ کا چہرہ چمک رہا تھا۔

مجموعی طور پرملکہ الزبتھ امریکا کے گذشتہ چودہ صدور میں سے تیرہ سے مل چکی ہیں۔ لنڈن جانسن وہ واحد امریکی صدر تھے جن سے وہ نہیں مل سکیں۔ امریکی صدور کے ساتھ ان کی ملاقاتیں 1951 میں ہیری ٹرومین کے ساتھ شروع ہوئیں جب وہ ابھی شہزادی تھیں۔ ان کے ساتھ ملاقات کا مقصد امریکا کے ساتھ مضبوط تعلقات برقرار رکھنا تھا۔ یہ بات یاد رکھنے کی ہے کہ دوسری جنگ عظیم میں امریکا برطانیہ کا اتحاد کتنا اہم تھا۔

ریگن کے ساتھ

انہوں نے 2007 میں وائٹ ہاؤس میں صدر جارج ڈبلیو بش کی طرف سے اپنے اعزاز میں دیے گئے ایک سرکاری عشائیے میں کہا کہ آپ کے ملک میں انتظامیہ اور میرے ملک کی حکومتیں آتی جاتی رہیں گی، لیکن ہمارے درمیان ہمیشہ بات چیت ہوتی رہے گی۔ ہر فریق دوسرے کی بات مانے گا اور ہم وقتاً فوقتاً اختلاف کر سکتے ہیں، لیکن ہم ہمیشہ متحد رہیں گے۔"

جوبائیڈن اور ملکہ الزبتھ
جوبائیڈن اور ملکہ الزبتھ

ملکہ نے رونلڈ ریگن کے ساتھ طویل گفتگو کی۔ انہوں نے ایک گھوڑے کی پیٹھ پربھی ملاقات کی۔اور ان کی کیلیفورنیا کے کھیت میں اینچیلاداس کھانا کھایا تھا۔ ملکہ نے جارج بش سینیر کے ساتھ Ballimator Orioles کے لیے بیس بال کا کھیل دیکھا۔ انہوں نے ڈوائٹ آئزن ہاور کو پوانوں کی تیاری کی ترکیب بھیجی جسے اس نے بالمورل کیسل میں کھایا تھا۔

تاہم چیزیں ہمیشہ آسانی سے نہیں چلتی تھیں۔ جب بش کی پہلی صدارت کے دوران وائٹ ہاؤس کے ساؤتھ لان میں ان کی 1991 کی تقریر کے دوران کسی نے مائیکروفون کو نیچے نہیں کیا تو ان کا چہرہ مائیکروفون کے پیچھے چھپ گیا اور ان کے تبصرے "ٹاکنگ ہیٹ اسپیچ" کے نام سے مشہور ہوئے۔

انہوں نے بعد میں کانگریس کے دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس سے خطاب میں کہا کہ ’’مجھے واقعی امید ہے کہ آپ مجھے آج وہیں سے دیکھ سکتے ہیں جہاں سے آپ ہیں۔‘‘

1976 میں ملکہ الیزابیتھ نے جیرالڈ فورڈ کے ساتھ "دی لیڈی ایک ٹرمپ" پر رقص کیا۔

اسی دورے کے دوران فورڈ اور اس کی اہلیہ، بیٹی فورڈ، ملکہ کو لفٹ میں پیلے رنگ کے بیضوی کمرے میں لے جا رہے تھے، جب دروازہ کھلا اور سامنے انہیں فورڈ کے کپڑے اتارے ہوئے بیٹے جیک کو ملے۔

بیٹی فورڈ نے واشنگٹن پوسٹ کو بتایا کہ "فکر مت کرو میرے پاس ان میں سے ایک گھر پر ہے‘‘۔

2018 میں بکنگھم پیلس میں گارڈ آف آنر کے دوران ملکہ کو اچانک معلوم ہوا کہ ڈونلڈ ٹرمپ شاہی پروٹوکول کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ان کے سامنے آئے ہیں۔ اس پرملکہ کو امریکی صدر سےبچنے کے لیے راستہ بدلنا پڑا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں