امریکا میں سعودی سفارت خانوں کی جعل سازوں اور نقالوں سے ہوشیار رہنے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

واشنگٹن میں سعودی عرب کی سفیر شہزادی ریما بنت بندر بن سلطان نے شہریوں کو نشانہ بنانے والی دھوکہ دہی کی کارروائیوں کے انتباہ کی تجدید کی ہے۔ انہوں نے گذشتہ اپریل میں سفارت خانے کے ٹوئٹر پیج پر پوسٹ کیے گئے ایک سابقہ الرٹ کو ری ٹوئٹ کیا ہے۔

گذشتہ اپریل میں سفارت خانے نے اعلان کیا تھا کہ اس نے جعلی کالز اور ای میلز کے ذریعے سعودی شہریوں کے بار بار دھوکہ دہی کے واقعات کی نشاندہی کی ہے جو نامعلوم افراد سفارت خانے کے ملازمین کا بہروپ اختیار کر کے لوگوں کو دھوکہ دے رہے ہیں۔

انہوں نے وضاحت کی کہ جعلسازوں نے الیکٹرانک پروگراموں کا استعمال کیا جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ کال کرنے والے کا نمبر واشنگٹن میں مملکت کے سفارت خانے کا نمبر ہے۔ واشنگٹن میں ثقافتی اتاشی کا نمبر ہے، یا بھیجنے والے کا ای میل پتہ سفارت خانے کی ایڈریس لسٹ سے تعلق رکھتا ہے۔

سفارت خانے نے اس وقت ایک بیان میں خبردار کیا تھا کہ جعلساز رقم کی منتقلی کی درخواست کر رہے ہیں اور اگر شہری منتقلی سے گریز کرتے ہیں، تو دھوکہ باز انہیں مملکت میں سکیورٹی حکام یا بین الاقوامی قانونی چارہ جوئی کرنے کی دھمکی دیتے ہیں۔

جب کہ سفارت خانے نے تصدیق کی کہ وہ شہریوں سے کسی بھی صورت میں رقم کسی دوسرے فریق کو منتقل کرنے کے لیے نہیں کہتا۔ بیان میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ اس کا کردار شہریوں کو خدمات کی درخواست کی صورت میں مخصوص اہلیت کے مطابق خدمات فراہم کرنا ہے۔

انہوں نے مملکت اور ریاستہائے متحدہ امریکا کے شہریوں سے کہا کہ وہ محتاط رہیں اور اس طرح کی مشکوک کالوں اور مراسلت کا جواب نہ دیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں