’’بھارتی رہنما انا دو رائی کا سفر آخرت تاریخ کا سب سے بڑا جنازہ تھا‘‘

تمباکو نوشی کے عادی سابق بھارتی وزیر اعلی کی موت کینسر سے ہوئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ان دنوں ملکہ الزبتھ دوم کی آخری رسومات کے حجم کے متعلق قیاس آرائیاں جاری ہیں۔ ملکہ کی آخری رسومات پیر 19 ستمبر کو ادا کی جائیں گی۔

تاریخ میں سب سے بڑا جنازہ بھارتی ریاست تامل ناڈو کے سابق وزیر اعلی کنجیوارام نترنجن انا دو رائی کا شمار کیا جاتا ہے۔ ان کو مختصرا ’’انا‘‘ کے نام سے جانا جاتا ہے۔

گنیز ورلڈ ریکارڈ بک کے مطابق انا کے جنازہ میں 15 لاکھ لوگ شریک ہوئے تھے جو اب تک کا سب سے بڑے جنازے کا ریکارڈ ہے۔ انا نے 3 فروری 1969 کو 59 سال کی عمر میں وفات پائی، ان کی موت غذا کی نالی کے کینسر کے باعث ہوئی۔

منہ میں تمباکو چبانے کے عادی ہونے کی وجہ سے ان کو کینسر ہوا تھا۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ کو موصول ہونے والے اقتباسات کے مطابق ان کی آخری رسومات تامل ناڈو، جو اس وقت مدراس تھا، کے دارالحکومت چنئی کے علاقے مرینا بیچ میں ادا کی گئیں۔ انہیں وہیں ساحل کے قریب ایک مقام پردفن کیا گیا۔ وہاں پر ان کی یادگار ’’انا میموریل‘‘ اب بھی سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے۔

ان کے جنازے کی بہت کم تصاویر اور ویڈیوز موجود ہیں۔ تاہم یہاں پیش کی گئی ایک ویڈیو دیکھ کر ان کے جنازے کی وسعت کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔ اس جنازہ میں ریاست بھر اور ہمسایہ ریاستوں سے بھی لاکھوں افراد نے شرکت کی تھی۔ ان کی تصویر بھی پیش کی جارہی۔ یہ تصویر بلندی سے لی گئی ہے جس سے بھی شرکاء کی تعداد کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔

صحافی، مصنف، مقرر اور خطیب

’’ انا‘‘ بھارت کی سیاست میں آنے سے قبل ایک صحافی، شاعر اور انگریزی کے استاد تھے۔ ان کی مقبولیت کی اصل وجہ ان کا مصنف، مقرر اور خطیب ہونا اور ان کی ذہانت ہے۔ وہ اپنی تقریر سے جذبات کو بھڑکا کر لوگوں کو متاثر کرتے تھے۔ انہوں نے ہندی کو مسترد کرکے تمل زبان کو استعمال کیا اور اس کی الگ شناخت قائم کی۔ اسی لئے ہۃ تامل ناڈو کے شہریوں میں بے پناہ مقبول ہوئے۔

وہ تین برس تک کینسر جیسے موذی مرض سے لڑتے رہے، کینسر ہونے کے بعد تین برس تک علاج کا فالو اپ خبروں میں نمایاں رہا، اسی باعث ریاست کے باشندوں کی ان سے ہمدردی میں بے پناہ اضافہ ہوگیا تھا۔ علاقہ کے ایک تہائی کے قریب افراد ان کی آخری رسومات میں شریک ہوئے۔ جوق در جوق قافلوں نے ان کے جنازے میں شرکت کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں