اماراتی وزیر خارجہ شیخ عبداللہ کی نیتن یاہو سے ملاقات، محدود وقت میں مثالی تعلقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زاید نے اسرائیلی دورے کے دوران سابق اسرائیلی وزیر اعظم اور لیکوڈ پارٹی کے سربراہ نیتن یاہو کے ساتھ ملاقات کی ہے۔ متحدہ عرب امارات کے وزیر خارجہ اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات کے دو سال مکمل ہونے کے چند روز بعد اسرائیلی دورے پہنچے۔

اسرائیل کے ساتھ کئی عرب ملکوں کے تعلقات امریکی سرپرستی میں ہونےوالے معاہدہ ابراہم کے تحت قائم ہوئے ہیں۔ ان تعلقات کے بعد اسرائیل اور عرب امارات تھوڑے عرصے میں باہم بہت قریب آگئے ہیں۔

نیتن یاہو کے ساتھ وزیر خارجہ عبداللہ بن زاید نے دوطرفہ معاملات پر تبادلہ خیال کیا۔ دونوں طرف سے معاہدہ ابراہم کے تحت ہونے والی دو طرفہ پیش رفت کو سراہا گیا۔ اماراتی وزیر خارجہ نے کہا محض دو سال کے عرصے میں ہر شعبے میں تعلقات کا یہ ماڈل بڑا کامیاب اور ثمرآور ثابت ہوا ہے۔

نیتن یاہو نے بھی ان دو برسوں کے دوران اسرائیل اور امارات کے درمیان دیکھی جانے والے تعاون اور قربت کو قابل لحاظ قرار دیا۔ کہ دونوں ملک ہر شعبے میں تعلقات کو فروغ دے رہے ہیں۔

اماراتی خبر رساں ادارے کے مطابق وزیر خارجہ شیخ عبداللہ بن زاید نے اسرائیلی وزیر خزانہ لیبر مان اور وزیر داخلہ اییلیت شاکید کے ساتھ بھی ملاقات کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں