جنرل اسمبلی اجلاس: ترکیہ کے صدر اور اسرائیلی وزیر اعظم کی ملاقات ہو گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی وزیر اعظم یائر لیپڈ اور ترکیہ کے صدر رجب طیب ایردوآن جنرل اسمبلی کے اجلاس کے دوران ملاقات کریں گے۔ یہ بات یائر لیپڈ کے دفتر نے ہفتے کے روز باضابطہ طور پر بتائی ہے۔ اسرائیلی حکام اس امکانی ملاقات کو ایک اہم سنگ میل قرار دے رہے ہیں ، انہیں توقع ہے کہ اس ملاقات کے نتیجے میں کافی عرصے سے رکے ہوئے معاملات میں بہتری پیدا ہوگی اور دو طرفہ امور آگے بڑھیں گے۔

واضح رہے دونوں ملکوں نے 2018 سے اپنے سفیروں کو ایک دوسرے ملک سے واپس بلا لیا تھا۔ ترکیہ اور اسرائیل کے درمیان فلسطینی تنازعہ پر اکثر مسئلہ رہتا ہے۔

پچھلے ماہ اس معاملے میں بہتری کا امکان تب پیدا ہوا تھا جب دونوں ملکوں نے اعلان کیا تھا کہ وہ اپنے اپنے سفیروں کی دوطرفہ تقرری کریں گے۔ اس سے قبل ماہ مارچ میں اسرائیلی صدر نے ترکیہ کا دورہ بھی کیا تھا۔

اسرائیلی صدر کا عہدہ اگرچہ رسمی نوعیت کا ہے تاہم دونوں ملکوں کے درمیان یہ ایک اہم موقع تھا۔ صدر ترکیہ طیب ایردوآن کی دعوت پر ہونے والا یہ دورہ 2008 کے بعد یہ پہلا اعلیٰ سطح کا دورہ تھا۔

اسرائیلی صدر کے دورے کے دو ماہ بعد ترکیہ کے وزیر خارجہ اسرائیل کا دورہ کیا اور دونوں ملکوں کے درمیان معاشی معاہدوں کو وسعت دینے کی بات ہوئی۔ معاہدہ ابراہم کے تحت عرب دنیا میں اسرائیل کے لیے پیدا ہونے والی قربت کے ماحول میں یہ اہم پیش رفت ہے۔

اسرائیلی وزیر اعظم کے دفتر نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے سالانہ اجلاس کے موقع پر یونان کے وزیر اعظم سے بھی یائر لیپڈ کی متوقع ملاقات کی اطلاع دی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں