.

جاپانی وزیراعظم کے دفتر کے قریب ایک شخص کی خود سوزی کی کوشش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مقامی میڈیا کے مطابق بدھ کی صبح ٹوکیو میں جاپانی وزیر اعظم فومیو کشیدا کے دفتر کے قریب ایک شخص نے خود کو آگ لگا لی۔ اور اسے بے ہوش حالت میں ہسپتال لے جایا گیا۔

آساہی ٹی وی چینل اور یومیوری اخبار سمیت ذرائع نے بتایا کہ سابق وزیر اعظم شنزو آبے کی 27 ستمبر کو ہونے والی سرکاری تدفین کے خلاف احتجاج کرنے والے شخص کے پاس ایک خط ملا ہے، جسے جولائی کے اوائل میں گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔

ٹی وی آساہی کے مطابق اس شخص نے پولیس کو یہ بتانے کے بعد خود کو آگ لگا لی کہ وہ آبے کی طے شدہ سرکاری تدفین کے خلاف ہے۔

کیوڈو نیوز ایجنسی نے کہا کہ پولیس نے ایک ایسے شخص کے بارے میں رپورٹ موصول ہونے کے بعد مداخلت کی جو شعلوں کے بڑے پیمانے پر میں تبدیل ہو گیا تھا۔

جاپان کی تاریخ میں سب سے طویل عرصے تک وزیر اعظم رہنے والے آبے کو 8 جولائی کو نارا (مغربی) شہر میں ایک انتخابی ریلی میں تقریر کرتے ہوئے گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔

انتہائی قوم پرست آبے ایک ممتاز شخصیت اور ایک متنازعہ سیاست دان تھے جنہوں نے صحت کی وجوہات کی بنا پر 2020 میں اقتدار چھوڑ دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں