ملائشیا اورانڈونیشیا کا ترکی سے مسلح ڈرون خریدکرنے میں اظہارِدلچسپی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

ملائشیا اورانڈونیشیا نے ترکی کی دفاعی فرم بایکر سے مسلح ڈرونزخریدکرنے میں گہری دلچسپی کااظہارکیا ہے۔ترکی کے ان ڈرونز نے متعدد ممالک میں میدان جنگ میں پانسہ پلٹنے میں اہم کردارادا کیا ہے اور اب متعدد ممالک اس سے یہ ڈرونز خرید کرنے کے خواہاں ہیں۔

ترک وزیرخارجہ مولودچاوش اوغلو نے سوموار کوٹوکیومیں ایک پریس کانفرنس میں کہاکہ بہت سے ایشیائی ممالک، بالخصوص ملائشیا اورانڈونیشیانے ہماری دفاعی صنعت کی مصنوعات میں گہری دلچسپی ظاہرکی ہے اور اس ضمن میں ان ممالک کے ساتھ سمجھوتوں پردست خط کیے جا رہے ہیں۔

جاپان کے سابق وزیراعظم شنزوآبے کی آخری رسومات میں شرکت کے موقع پرٹوکیو میں انھوں نے مزید کہا کہ ’’ہمیں سب سے زیادہ خوشی اس بات کی ہے کہ ہم جاپان کی ڈرونز کی ضرورت کو پورا کریں گے‘‘۔

شام، یوکرین اورلیبیا کے تنازعات میں ترک ڈرونز کے اثرات کے بعد اب ان کی بین الاقوامی طلب میں اضافہ ہوا ہے۔21 ستمبر کو برطانوی خبررساں ایجنسی رائٹرز نے اطلاع دی تھی کہ بایکر نے اس ماہ متحدہ عرب امارات کو 20 مسلح ڈرون مہیا کیے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں