انڈونیشیا: فٹبال میچ کے دوران ہنگامہ آرائی سے ہلاکتوں کی تعداد 174 تک جا پہنچی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

انڈونیشیا میں فٹبال میچ کے دوران ہنگامہ آرائی اور بھگدڑ مچنے سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 174 تک جا پہنچی، جبکہ سیکڑوں افراد زخمی ہوئے ہیں۔

انڈونیشیا کے شہر ملنگ میں فٹبال میچ کے دوران ہزاروں شائقین گراؤنڈ میں داخل ہو گئے جب کہ پولیس نے انہیں منتشر کرنے کے لیے آنسو گیس کے شیل فائر کیے جس سے بھگدڑ مچ گئی جس کے نتیجے میں اسٹیڈیم میں پہلے مرحلے میں 129 افراد ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوئے۔

کنجوروہان اسٹیڈیم میں گزشتہ رات جب اریما ایف سی کی ٹیم مہمان ٹیم اور تلخ حریف پرسیبا سورابایا سے 3-2 سے ہار گئی جس کے بعد اریما ایف سی کے حامیوں نے پچ پر دھاوا بولا۔

دوسری جانب پولیس کا کہنا تھا کہ انہوں نے شائقین کو اسٹینڈ پر واپس آنے کے لیے بہت کوشش کی جب کہ 2 اہلکاروں کی ہلاکت کے بعد آنسو گیس کے شیل فائر کئے۔ پولیس کے مطابق بہت سے متاثرین کو روندا گیا یا گلا دبا کر ہلاک کر دیا گیا۔

مشرقی جاوا کے پولیس چیف نیکو افینٹا نے کہا کہ بہت سے لوگ جب ایک ساتھ اسٹیڈیم سے نکلنے کیلیے باہر کی طرف بھاگے اور اسی دوران تو دم گھٹنے سے لوگ ہلاک ہوئے۔ انہوں نے ابتدائی طور پر کہا کہ کل 127 افراد ہلاک ہوئے تھے لیکن بعد میں یہ تعداد 174 تک پہنچ گئی جب کہ متعدد لوگ زخمی ہوئے۔

بھگدڑ کے دوران اسٹیڈیم کے اندر سے لی گئی تصاویر میں بڑی مقدار میں آنسو گیس اور لوگ باڑ پر چڑھتے ہوئے دکھائی دے رہے ہیں۔ لوگ افراتفری کے دوران زخمی تماشائیوں کو اسپتال لے جا رہے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں