9 سالہ بچی کو قتل کرنے والے 34 سالہ برطانوی شہری کے خلاف مقدمہ چلے گا

قاتل اور اس کی مدد کرنے والے دو ملزمان پیر کو عدالت میں پیش کیے جائیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

برطاانوی پولیس نے 34 سالہ برطانوی شہری پر 9سالہ بچی کے قتل کا الزام عائد کر دیا ہے۔ یہ واقعہ لیوپو کے علاقے میں 22 اگست کو پیش آیا تھا ۔ جب ایک شخص نے ایک بچی کو اس کے گھر میں قتل کر دیا تھا۔

اولیویا پریٹ کوربیل کو سینے میں گولی ماری گئی تھی۔ بچی اس حملہ اور سے بچنے کے لیے اپنے گھر میں داخل ہوگئی مگر اس نے پیچھا کر کے اسے قتل کر دیا ۔ اس واقعے کو گینگ وار طرز کا واقعہ قرار دیا جارہا ہے۔

اس 9 سالہ بچی کی اس طرح گولی مار کر ہلاک کردینے کا لیور پول شہر میں ایک ہفتے کے دوران یہ تیسرا واقعہ ہے۔ ان پے در پے واقعات نے لوگوں ک ہلا کر رکھ دیا ہے۔ مطالبہ کیا جارہے کہ ان قاتلوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔

پولیس کی طرف سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے تھامس کیشمین کا تعلق لیورپول کے مضافات میں مغربی ڈربی کا رہنے والا ہے۔ اس کے خلاف نوسالہ بچی کے قتل کا مقدمہ چلایا جارہا ہے ۔ لیکن یہ ایک پیچیدہ تفتیش تھی۔ پولیس نے اسی قاتل کے خلاف مقتول بچی کی ماں پر قاتلانہ حملے کا بھی مقدمہ دائر کیا ہے۔

نوسالہ بچی کی ماں کے بارے میں کہا جارہا ہے کہ وہ ایک سزا یافتہ چور ہے۔ کیشمین پر دیگر الزامات میں دوآتشیں اسلحے رکھنے کا بھی شامل ہے۔

اس کے علاوہ اسی کے علاقے کے رہائشی 40 سالہ پال رسل پر حملہ آور کی مدد کرنے کا الزام ہے اور اس پر بھی مقدمہ چلایا جارہا ہے۔ یہ دونوں پیر کے روز عدالت میں پیش کیے جائیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں