فلم بندی میں گولی چلنے سے موت، بالڈون کا ہچنز کے لواحقین سے معاہدہ کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی اداکار ایلک بالڈون نے بدھ کے روز اعلان کردیا کہ انہوں نے اپنی فلم "رسٹ" کی شوٹنگ دوان گولی چلنے سے مرنے والی سینماٹو گرافر ہیلینا ہچنز کے خاندان سے معاہدہ کرکے معاملہ حل کرلیا ہے۔ یاد رہے اکتوبر 2021 میں نیو میکسیکو میں فلم کی عکس بندی کے دوران بالڈون سے پستول کی گولی چلنے سے حادثاتی طور پر ہچنز کی موت ہوگئی تھی۔

بالڈون نے ایک انسٹاگرام پوسٹ میں لکھا کہ وہ اس تکلیف دہ مسئلہ کے حل میں مدد کرنے والے ہر شخص کے گزار ہیں۔

اے ایف پی کو موصول ایک بیان کے مطابق یہ فلم جنوری 2023 میں دوبارہ تیار کی جائے گی۔

خیال رہے 64 سالہ بالڈون نے فلم بندی کے دوران فائر کیا تو پستول اصلی گولیوں سے بھرا ہوا تھا جس کا انہیں علم نہیں تھا۔

بالڈون کے خلاف سول عدالت میں کئی مقدمے دائر کیے گئے۔ متاثرین نے معاوضے بھی طلب کئے تھے۔ مقدمہ کرنے والوں میں سے ہچنز کے خاندان کے ایک فرد نے کہا تھا کہ مجھے سیٹ پرموجود افراد نے بتایا تھا کہ بالڈون کو بتایا گیا تھا کہ بندوق میں اصلی گولی نہیں ہے۔ دوسرا یہ کہ ہچنز نے خود کہا تھا کہ وہ اس کو نشانہ بنائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں