فون پر سابق شوہر سے تلخی، مصری ماں نے دو بچوں کو بالکونی سے پھینک دیا

عمارت کے اطراف نگرانی کے کیمروں نے بچوں کے گرائے جانے کے لمحات کو محفوظ کرلیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصر میں ایک افسوسناک واقعہ اس وقت پیش آگیا جب ٹیلی فونک گفتگو میں سابق شوہر سے تلخی کے بعد خاتون نے دو بچوں کو بالکونی سے نیچے پھینک دیا۔ واقعہ قاھرہ کے جنوب کے علاقے حلوان میں پیش آیا۔ پبلک پراسیکیوشن نے خاتون کو حراست میں لیکر تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

پبلک پراسیکیوشن کو جمعرات کی شام اطلاع موصول ہوئی کہ حلوان کے علاقے اطلس میں ایک ماں نے اپنے دو بچوں کو اپنے گھر کی بالکونی سے پھینک دیا ہے۔ استغاثہ کی ٹیم فوری جائے وقوعہ پہنچ گئی۔ ٹیم نے حالات کا جائزہ لیا، پڑوسیوں اور عینی شاہدین کے بیانات بھی ریکارڈ کر لئے۔

سیکیورٹی فورسز کی تحقیقات سے معلوم ہوا ہے خاتون دماغی عارضہ میں مبتلا ہے۔ اس کا اپنے سابق شوہر سے جھگڑا چل رہا تھا۔ کسی بات پر تلخی ہوئی تو اس نے اپنے بچوں 12 سالہ یاسمین اور 8 سالہ محمد کو گھر کی بالکونی سے نیچے پھینک دیا۔ دونوں زخمی بچوں، دو پڑوسیوں اور ایک سماجی رہنما کے بیانات قلمبند کر لئے گئے ہیں۔

استغاثہ نے انکشاف کیا کہ واقعہ کے روز خاتون نے ٹیلی فون پر سابق شوہر کو دھمکی دی تھی کہ اگر اس کے اخراجات نہ اٹھائے تو وہ دونوں بچوں کو نقصان پہنچائے گی۔

پراسیکیوشن نے دونوں بچوں کو ان کی نانی اور والد کے حوالے کر دیا ۔ دونوں بچوں کا طبی معائنہ بھی کرایا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں