آسٹریلیا نے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا فیصلہ واپس لے لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آسٹریلیا نے منگل کو اعلان کیا ہے کہ وہ مغربی یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر مزید تسلیم نہیں کرے گا۔ حکومت نے سابق قدامت پسند حکومت کی جانب سے کیے گئے ایک متنازعہ فیصلے کو تبدیل کر دیا گیا ہے۔

آسٹریلیا کے وزیر خارجہ پینی وونگ نے ایک بیان میں کہا کہ 'یروشلم ایک حتمی حیثیت کا مسئلہ ہے جسے اسرائیل اور فلسطینی عوام کے درمیان کسی بھی امن مذاکرات کے ایک حصے کے طور پر حل کیا جانا چاہیے‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ "آسٹریلیا دو ریاستی حل کے لیے پرعزم ہے جس میں اسرائیل اور مستقبل کی فلسطینی ریاست بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ سرحدوں کے اندر امن اور سلامتی کے ساتھ ساتھ رہیں"۔ انہوں نے مزید کہا کہ "ہم کسی ایسے نقطہ نظر کی حمایت نہیں کریں گے جو اس امکان کو کمزور کرے۔"

2018 میں سکاٹ موریسن کی قیادت میں سابقہ قدامت پسند اتحادی حکومت نے مغربی یروشلم کو اسرائیل کے دارالحکومت کے طور پر باضابطہ طور پر تسلیم کیا تھا، جس سے مشرق وسطیٰ کی دہائیوں کی پالیسی کو تبدیل کر دیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں